پاکستان فلم انڈسٹری میں بہتری کے آثار نمایاں ہونے لگے ہیں: ارمینا خان


ameenaبرطانوی اداکارہ وماڈل ارمینا رانا خان نے کہا ہے کہ پاکستان فلم انڈسٹری میں بننے والی فلمیں ہرلحاظ سے عالمی معیارکے مطابق ہیں۔
اعلیٰ تعلیم یافتہ اور نوجوان فلم سازوں نے جب سے فلم انڈسٹری کی باگ ڈور سنبھالی ہے، تب سے بہتری کے آثارنمایاں ہونے لگے ہیں بلکہ پڑھے لکھے نوجوان اب اس شعبے کو بڑی ذمے داری کے ساتھ بطورپروفیشن اپنانے لگے ہیں جو بہت خوش آئند بات ہے۔ ان خیالات کا اظہارارمینا رانا خان نے گزشتہ روزمیڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ میں نے امریکا، کینیڈا اوربرطانیہ کے علاوہ ہندوستان میں بھی اپنی فنکارانہ صلاحیتوں کے جوہردکھائے ہیں۔ ہرجگہ کام کرنیوالوں کا اپنا ایک اندازہے۔لیکن اس بات کووثوق کے ساتھ کہتی ہوں کہ پاکستانی فلم میکرز اس وقت بہترین کام کررہے ہیں۔ ایک طرف منفرد موضوعات پرفلمیں بنائی جارہی ہیں تودوسری جانب جدید ٹیکنالوجی سے بھی خوب استفادہ کیا جارہا ہے۔ یہی نہیں جدید طرز کے سینماگھروں کی بدولت شائقین کی بڑی تعداد اب اپنی فیملیز کے ہمراہ سینماگھروںکا رخ کررہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ میں نے پاکستانی ڈرامہ اورفلموں میں بھی کام کیا ہے، جسے دیکھ کر اندازہ ہوچکا ہے کہ آنے والا دور پاکستان کے باصلاحیت فلم میکرز ، فنکاروں اورتکنیک کاروں کا ہے جو وسائل کی کمی کے باوجود اچھی فلمیں بنانے کا ہنرجانتے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں ارمینا رانا خان نے کہاکہ پاکستان میں باصلاحیت لوگوں کی کوئی کمی نہیں ہے۔ اگراسی طرح عمدہ کام ہوتا رہا تووہ دن دور نہیں جب دنیا کے بیشترممالک کے فنکار پاکستان میں کام کرنے کوترجیح دیں گے۔ یہی نہیں کو پروڈکشن کے میدان میں بھی بڑی واضح کامیابیاں ہوں گی، جس کے بارے میں ابھی کچھ کہا نہیں جارہا ہے لیکن مجھے یقین ہے کہ میڈیا پرجلد ہی ایسی خبریں آئیں گی جس سے دوسرے ممالک کا رخ کرنے والے فنکار اور تکنیک کار بھی واپس آئینگے۔


Comments

FB Login Required - comments