پاکستان کا بھارت کو کلبھوشن یادیو تک سفارتی رسائی دینے پر غور


indianترجمان دفترخارجہ نفیس زکریا کا کہنا ہے کہ بھارت کی جانب سے را کے گرفتار ایجنٹ کلبھوشن یادیو تک سفارتی رسائی کی درخواست آئی ہے جس پر غور کیا جا رہا ہے۔
دفتر خارجہ میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران نفیس زکریا نے کہا کہ ”را“ کے ایجنٹ کی گرفتاری کے بعد پاکستان نے بھارتی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کرکے احتجاج کیا، بھارت یہ بات تسلیم کرے یا نہ کرے لیکن کل بھوشن خود اعتراف کرچکا ہے کہ وہ ”را“ کا ایجنٹ ہے۔ بھارتی دہشت گردی کا مسئلہ ہم نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے 5 مستقل اراکین کے گوش گزار کیا ہے، اس کے علاوہ یورپی یونین کے سفیر اور بین الاقوامی برادری کو بھی اس کی مکمل تفصیلات دی جائیں گی۔
نفیس زکریا کا کہنا تھا کہ ”را“ کے ایجنٹ کی گرفتاری کے وقت اور ایرانی صدر کے دورہ کا کوئی تعلق نہیں، یہ محض اتفاق ہے کہ خبر ان کے دورہ کے وقت سامنے آئی ہے، اس مسئلے پر ہم ایران کی حکومت کےساتھ مسلسل رابطےمیں ہیں، ایران نے یقین دلایا ہے کہ اس کی سرزمین پاکستان کےخلاف استعمال نہیں ہونےدی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے مولانا مسعود اظہر تک رسائی مانگنے کا معاملہ ان کے علم میں نہیں، بھارت نے اگر مسعود اظہر تک رسائی مانگی تو یہ معاملہ وزارت داخلہ دیکھے گی۔
پاک بھارت مذاکرات کے حوالے سے ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان چاہتا ہے کہ تمام مسائل کا حل مذاکرات سے نکالا جائے، مذاکرات کسی واقعہ سے جڑے نہیں ہونے چاہئیں، پاک بھارت خارجہ سیکرٹری مذاکرات میں بہت سے پہلو ہیں، مذاکرات کے لئے مناسب تاریخ کا تعین کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔


Comments

FB Login Required - comments