دیوانی


بستی میں ایک دیوانی عورت رہتی تھی۔

وہ بچوں کو کچھ نہ کہتی،

لیکن بڑے اس سے ڈرتے تھے۔

وہ راہ چلتے کسی کو بھی ڈانٹ دیتی،

پتھر اچھال دیتی۔

تھانے دار، نمبر دار، تحصیل دار،

سب اسے دیکھ کر راستہ بدل دیتے تھے۔

وہ پنچایت کو بھی نہیں بخشتی تھی۔

کل ایک فیصلہ حسب دستور چوہدری کے حق میں کیا گیا۔

پھر چوپال میں خاموشی چھا گئی۔

کچھ دیر بعد سرپنچ بڑبڑایا،

’’آج اس دیوانی نے ہم پر پتھر نہیں پھینکا۔‘‘

کسی نے آگاہ کیا،

’’جناب والا!

غلط فیصلوں پر پتھر مارنے والی دیوانی کا انتقال ہو گیا ہے۔‘‘

image_pdfimage_printPrint Nastaliq

Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مبشر علی زیدی

مبشر علی زیدی جدید اردو نثر میں مختصر نویسی کے امام ہیں ۔ کتاب دوستی اور دوست نوازی کے لئے جانے جاتے ہیں۔ تحریر میں سلاست اور لہجے میں شائستگی۔۔۔ مبشر علی زیدی نے نعرے کے عہد میں صحافت کی آبرو بڑھانے کا بیڑا اٹھایا ہے۔

mubashar-zaidi has 83 posts and counting.See all posts by mubashar-zaidi