فلم کرتے ہوئے کسی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑا : صبور علی


saboor ali

کردار چھوٹا بڑا نہیں بلکہ پرفارمنس اہم ہوتی ہے، چیلنجنگ کردار کرناچاہتی ہوں ”ایکٹر اِن لاء“ میں کیریئر اہم ترین کردار کر رہی ہوں۔
ان خیالات کا اظہار ماڈل واداکارہ صبور علی نے اپنے ایک انٹرویو میں کیا۔ اداکارہ کا کہنا تھا کہ چند برسوں میں اچھی فلمیں بننے لگی ہیں اور اس میں کام کرنے والوں کی اکثریت ٹی وی سے ہی ہے۔ اسی لیے مجھے فلم کرتے ہوئے کسی قسم کی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔ ٹی وی ڈرامہ اور فلم کے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ فلم کا فاسٹ ٹیمپو ہے، ”ایکٹر ان لائ“ میں فہد مصطفی کی چھوٹی بہن کا رول کر رہی ہوں۔ہدایتکار نبیل قریشی ”نامعلوم افراد“ جیسی کامیاب فلم بنا چکے۔
جس کو باکس آفس پر فلم بینوں نے پسند بھی کیا۔ وہ اپنی اس فلم پر بھی بھرپور محنت کر رہے ہیں، اپنے کردار سے پوری طرح مطمئن ہوں۔ میرے نزدیک فنکار کی پرفارمنس اہم ہوتی ہے،اگر آپ کے اندر کچھ کرنے کا جذبہ ہے تو چند سین میں ہی فنکار دیکھنے والوں کی توجہ حاصل کرلیتا ہے۔ اداکارہ کا کہنا تھا کہ میری بہن سجل علی اداکاری اور ماڈلنگ کے حوالے سے اپنی ایک پہچان رکھتی ہیں ، ان کا نام اور شہرت بطور اداکارہ وماڈل میری ذمے داری اور زیادہ بڑھا دیتی ہے۔
اسی لیے اپنے ہر پروجیکٹ کو بہتر سے بہتر کرنے کے لیے کوشاں رہتی ہوں۔ صبور علی نے کہا کہ پاکستانی فنکار بھارت میں بھی بے حد مقبول ہیں ، اسی لیے انھیں بولی وڈ فلموں میں سائن کیا جارہا ہے۔ ہمارے ہاں بھی بولی وڈ فنکاروں کو سائن کرنے لگے ہیں جو خوش آئند بات ہے۔ ”ایکٹر ان لاء“ میں بولی وڈ کے معروف اداکار اوم پوری کے ساتھ کام کرکے اچھا لگا۔انھوں نے کہا کہ ”ایکٹر ان لاء“ کے طرح کسی پروجیکٹ کی آفر ہوئی تو ضرور کام کروں گی۔


Comments

FB Login Required - comments