کرپشن ثابت ہو جائے تو سیاست چھوڑ دوں گا: خورشید شاہ


khorsheed shahاپوزیشن لیڈرخورشید شاہ کا کہنا ہے کہ وہ اب تک جتنی وزارتوں میں رہے صرف عوام کی خدمت کی ہے اور اگر ان پر کرپشن ثابت ہوجائے تو وہ سیاست چھوڑ دیں گے۔
قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ ایک شخص کل کہہ رہا تھا خورشید شاہ کے خلاف نیب کی بہت سی فائلیں ان کے پاس آگئی ہیں،وزیرداخلہ نے جیسی بات کی ایسی تو عام آدمی بھی نہیں کرتا ہے، وزیر داخلہ بڑے شیربنتے ہیں ، یہ شیر نہیں گیدڑ سے بھی بدتر ہیں، یہ وہ لوگ ہیں جن کا لیڈر جلاوطن ہوا تو وہ گھروں میں سکون کی نیند سوتے رہے، گھٹیا آدمی بھی ایسی بات نہیں کر سکتا جوایک وزیرنے کی، وزیرداخلہ ان کی زبان بندی کرنا چاہتے ہیں اسی لیے وہ انہیں بلیک میل کرتے ہیں، کیا نیب وزیر داخلہ کے ماتحت ہے اس کا جواب بھی آنا چاہیے۔
پیپلز پارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ وہ مرسکتے ہیں لیکن کرپشن نہیں کرسکتے،وہ آج تک جتنی وزارتوں میں رہے ہیں صرف عوام کی خدمت کی ہے، 2 بینک اکاو¿نٹس کے علاوہ ان کا کہیں بھی کوئی اکاو¿نٹ نہیں۔ انہوں نے 1973 سے کاروبار شروع کیا لیکن نواز شریف کی حکومت آئی تو ان کے خلاف نیب کے کیسز بنائے گئے،وہ خداکو حاضر ناظر جان کرکہتے ہیں کہ ایف آئی اے اور نیب کے بجائے ایوان ان کا احتساب کرے، قوم کو بتایا جائے کہ اپوزیشن لیڈر نے کون سے فوائد حاصل کیے۔ جس دن ان پر کرپشن ثابت ہوجائے تو وہ ان کا آخری دن ہوگا، تحقیقاتی ٹیم کو سکھر بھجوایاجائے اور اگر ایک انچ زمین پر بھی قبضہ ثابت ہو تو آج سے ان کا استعفا قبول کرلیں۔


Comments

FB Login Required - comments