مجھ پر حملہ نہیں کیا گیا: نعیم بخاری


پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نعیم بخاری نے لندن میں حملے کی افواہوں کو مسترد کردیا۔ لندن میں جیو نیوز کے نمائندے مرتضیٰ علی شاہ سے گفتگو میں ممتاز قانون دان نے کہا کہ وہ نیند میں ٹرین سے اترے تھے، پیر پھسلنے کی وجہ سے گرنے کی وجہ سے چوٹیں لگیں۔

برطانوی پولیس نے بھی نعیم بخاری پر حملے کی خبروں کو بے بنیاد قرار دیدیا۔ برطانوی ٹرانسپورٹ پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ لندن میں پی ٹی آئی رہنما نعیم بخاری پر حملہ نہیں کیا گیا، پولیس کے پاس نعیم بخاری پر کسی حملے کا کوئی رکارڈ نہیں۔

یاد رہے کہ ممتاز قانون دان اور پی ٹی آئی کے رہنما نعیم بخاری برطانوی دارالحکومت لندن کے زیر زمین اسٹیشن کے پلیٹ فارم پر گرنے سے زخمی ہو گئے تھے، انہیں سر اور پسلیوں میں چوٹیں آئی تھیں، نعیم بخاری کو اسپتال منتقل کیا گیاجہاں ڈاکٹرز نے اُن کی حالت خطرے سے باہر بتاتے ہوئے انتہائی نگہداشت وارڈ میں داخل کرلیا تھا۔

نعیم بخاری کا کہنا تھا کہ ان کی طبیعت پہلے سے بہتر ہے، لیکن ابھی مزید تین چار دن اسپتال میں رکنا پڑے گا۔ انہوں نے اپنی جلد صحت یابی کے لئے دعا کی اپیل کی ہے ۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں