کشمیر: پتھراؤ کی زد میں آ کر انڈین سیاح ہلاک

ریاض مسرور - بی بی سی اردو سروس سری نگر


کشمیر

Getty Images

انڈیا کے زیرِ انتظام کشمیر میں پولیس کے مطابق کشیدگی کے دوران سرینگر کے نواحی علاقے ناربل میں ایک ٹیکسی پتھراؤ کا نشانہ بن گئی جس میں سوار انڈین نوجوان زخمی ہونے کے باعث ہلاک ہو گیا۔

انڈیا کی جنوبی ریاست تمل ناڑو کا رہنے والا نوجوان سیاح تھیرومنی رجوال سر پر پتھر لگنے سے ہلاک ہوا۔

اسی بارے میں

سلجھے ہوئے ڈاکٹر رفیع نے بندوق کیوں اٹھائی؟

اس واقعے میں سبرینہ نام کی کشمیری لڑکی بھی زخمی ہوئی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔ منگل کی صبح تھیرمنی کی لاش کو تمل ناڑو روانہ کیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ تھیرومنی دوسرے سیاحوں اور بعض مقامی مسافروں کے ہمراہ ایک ٹیکسی میں سیاحتی مقام گلمرگ کی طرف جا رہے تھے کہ ناربل پہنچتے ہی ٹیکسی پر پتھراؤ ہوا۔

شیرِ کشمیر ہسپتال کے ایک ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ ’تھیرو منی کے سر پر پتھر لگا تھا جس کی وجہ سے ان کا اعصابی نظام متاثر ہو گیا۔‘

قابل ذکر ہے کہ کشمیر میں مسلسل ہلاکتوں کے خلاف چار روز سے ہڑتال ہے جس کے دوران مظاہروں کو روکنے کے لیے حکام نے بیشتر علاقوں کی ناکہ بندی کر رکھی ہے۔

گذشتہ اتوار کو شوپیان میں مسلح تصادم کے دوران پانچ شدت پسند مارے گئے تھے اور انہیں بچانے کے لیے ہزاروں لوگوں نے تصادم کی جگہ کے قریب مظآہرے کیے۔

کشمیر

Getty Images
گذشتہ اتوار کو شوپیان میں مسلح تصادم کے دوران پانچ شدت پسند مارے گئے تھے

فورسز نے مظاہرین پر فائرنگ کی جس میں مزید پانچ شہری مارے گئے۔ مارے گئے شدت پسندوں میں ایک یونیورسٹی کا پروفسیر بھی شامل تھا جو صرف دو روز قبل روپوش ہو کر مسلح گروپ حزب المجاہدین میں شامل ہو گیا تھا۔

سیاحت کی صنعت سے جڑے حلقوں نے تھیرومنی کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے سیاحوں کو تحفظ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

قابل ذکر ہے اگلے ماہ امرناتھ گھپا کی یاترا بھی شروع ہورہی ہے۔ اس یاترا کے لیے لاکھوں انڈین ہندو ہر سال چندن واڑی اور سونہ مرگ کی پہاڑیوں سے ہوتے ہوئے گھپا میں برفیلے شیو لنگ کا درشن کرتے ہیں۔

یاترا کا راستہ انتہائی کشیدہ اضلاع پلوامہ اور اننت ناگ سے ہو کر گزرتا ہے۔ سکیورٹی اداروں، فوج اور پولیس نے ابھی سے یاتریوں کو تحفظ دینے کی منصوبہ بندی شروع کر دی ہے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 5986 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp