بھارت میں شدید گرمی سے 100 افراد ہلاک


indiaپاکستان کے پڑوسی ملک ہندوستان میں گرمی کی شدید لہر کے باعث 100 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے۔حکومتی عہدیداران کا کہنا ہے کہ شدید گرمی سے متاثرہ ریاستوں میں سکول بند کر دیے گئے ہیں جبکہ لوگوں کا کھلی فضا میں کام کرنا محال ہوگیا ہے۔
ہندوستان میں عموماً مئی اور جون میں شدید گرمی پڑتی ہے، لیکن رواں سال چند ریاستوں میں اپریل میں ہی پارہ 40 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے، جس نے حکام کو ہنگامی اقدامات اٹھانے پر مجبور کردیا ہے۔
عہدیداران کے مطابق ہندوستان کی جنوبی ریاست تلنگانہ میں اب تک شدید سے 45، آندھرا پردیش میں 17 جبکہ اڑیسا 43 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔
بھارتی محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر وائی کے ریڈی کا کہنا تھا کہ تلنگانہ میں 2006 کے بعد اپریل کا یہ سب سے گرم ترین مہینہ ہے۔انہوں نے کہا کہ اس بات پر پہلے ہی تشویش کا اظہار کیا گیا تھا کہ تلنگانہ میں گرمی سے ہلاکتیں بڑھ سکتی ہیں، جس کے باعث ان کے محکمے نے لوگوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایات بھی جاری کی تھیں۔
تلنگانہ میں سکول گرمیوں کی چھٹیوں سے 2 ہفتے قبل ہی گزشتہ ہفتے بند کردیے گئے تھے، جبکہ اڑیسا میں بھی انتظامیہ کی جانب سے ہنگامی اقدامات کے تحت 26 اپریل تک سکول بند رکھنے کے احکامات جاری کیے گئے ہیں جبکہ گرمی کے اوقات میں تعمیراتی کام پر بھی پابندی عائد کردی گئی ہے۔
چھوٹے پیمانے پر کاروبار کرنے والے افراد بھی حالیہ گرمی سے شدید متاثر ہوئے ہیں۔


Comments

FB Login Required - comments