پورن پاس کسے ملے گا؟


انٹرنیٹ کے انقلاب نے فحش فلموں تک رسائی اس قدر آسان بنا دی ہے کہ نوجوان نسل کی بڑی تعداد ان کی لت میں پڑ چکی ہے، حتیٰ کہ بچے بھی فحش فلموں کے اس سیلاب سے محفوظ نہیں رہ پا رہے۔ تاہم اب برطانوی حکومت نے ایک ایسا قابل ستائش اقدام اٹھانے کا فیصلہ کر لیا ہے جس سے کم از کم بچوں کو اس لت سے دور رکھنا یقینی ہو جائے گا۔ میل آن لائن کے مطابق برطانوی حکومت فحش فلموں کی ویب سائٹس تک رسائی کو عمر کی تصدیق سے مشروط کرنے جا رہی ہے اور اس کے لیے بہت حیران کن طریقہ وضع کیا گیا ہے۔

اس طریقے میں فحش ویب سائٹس تک رسائی کے خواہش مند افراد کو 16ہندسوں پر مشتمل ایک کوڈ خریدنا ہو گا جسے انٹرنیٹ پر داخل کرنے کے بعد ہی انہیں ویب سائٹ تک رسائی ملے گی، اس کوڈ سے یہ تصدیق ہو گی کہ متعلقہ شخص کی عمر 18سال سے کم نہیں ہے۔ میل آن لائن کے مطابق اس کوڈ کو ’پورن پاس‘ (Porn pass)کا نام دیا گیا ہے جو اخبار فروشوں کے پاس دستیاب ہو گا اور ان سے خریدا جا سکے گا۔’برطانوی بورڈ آف فلم کلاسیفیکیشن‘کے مطابق یہ کوڈ ایک کارڈ کی صورت میں فروخت کیا جائے گا جس کی قیمت لگ بھگ 10پاؤنڈ (تقریباً 1500روپے)ہو گی۔یہ کارڈ دیگر ایسی چیزیں، شراب اور خنجر وغیرہ، بھی خریدنے میں کام آئے گا جن کی خریداری پر عمر کی حد لاگو ہے۔اخبار فروش کسی شخص کو یہ کارڈ فروخت کرنے سے قبل اس کا پاسپورٹ یا ڈرائیونگ لائسنس وغیرہ دیکھ کر تصدیق کریں گے کہ اس کی عمر 18سال یا اس سے زائد ہے۔ اس طریقے سے انٹرنیٹ صارفین ویب سائٹس کو اپنی ذاتی معلومات دینے سے بھی محفوظ رہیں گے اور ان کی عمر کا تعین بھی یقینی ہو سکے گا۔‘‘

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں