معروف اسلامی سکالر طارق رمضان اور جسم فروش خاتون کے درمیان جنسی الزامات کا تبادلہ


آکسفورڈ یونیورسٹی کے سرکردہ مسلم سکالر طارق رمضان جنسی الزامات کی زد میں ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق 55سالہ پروفیسر طارق رمضان پر فرانس کی 45سالہ مونیا ریبوجی نامی جسم فروش عورت نے الزام عائد کیا ہے کہ پروفیسر طارق نے اسے نو بار جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔ مونیا نے بتایا ہے کہ پروفیسر طارق ہمارے ساتھ ’جنسی پارٹیوں‘ میں شریک ہوتا تھا جہاں دیگر بھی وی آئی پی مہمان ہوتے تھے۔ ان پارٹیوں کے بعد مختلف مواقع پر ملزم نے مجھ پر جنسی حملے کیے۔

واضح رہے کہ طارق رمضان اخوان المسلمون کے بانی امام حسن البنا کے نواسے ہیں۔

https://dailypakistan.com.pk/07-Jun-2018/793947

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں