خوش خبری


ہر گاہ بذریعہ اشتہار ہذٰا عوام الناس کو خوش خبری سنائی جاتی ہے کہ آپ کی دعائوں سے نوازشریف کو عدالت سے سزاہونے کے بعد ان کے سیاسی تابوت میں آخری کیل ٹھک چکا ہے۔ ان شا اللہ بہت جلد جیل جا کر وہ اپنے انجام کو پہنچیں گے اورہم اپنی منزل پر۔ سو بغیر وقت ضایع کیے آیندہ پانچ سال تک آپ پر سونامی تحریک کی بلا شرکت ایرے غیرے و نتھو خیرے حکمرانی کرنے کی تمام تر تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ اس سلسلے میں فاضل ارباب سونامی کا ایک ہنگامی اجلاس آج مرکزی سیکرٹریٹ میں منعقد ہوا‘ جس میں اس بات پر مکمل اتفاق رائے پایا گیا، کہ تبدیلی دہلیز سے آ لگی ہے اور سونامی کی بپھری لہریں 25 جولائی کے دن تحریک کو اچھال کر مسند اقتدار پر بٹھا کر ہی تھمیں گی۔

پس نتائج کا بروقت اور صحیح ادراک کرتے ہوئے صدر مملکت‘ وزیراعظم‘ گورنر صاحبان‘ وزرائے اعلیٰ اور وزرا کے نام فائنل کردیئے گئے‘ تا کہ اقتدار میں آ کر ان کاموں میں وقت ضایع نہ ہو اور بلا تاخیر وطن ِعزیز کے دامان صد چاک کی رفو گری اور مخالفین کا مکو ٹھپنے جیسے اعمال صالح بیک وقت شروع کیے جا سکیں۔

اجلاس میں ووٹروں کے لیے یک سطری ہدایت نامہ بھی جاری کیا گیا کہ وہ صرف بلے پر مہر لگانے کی رسمی کارروائی مکمل کریں اور باقی کا کام ہم جان بازوں پر چھوڑ دیں۔ المختصر! اجلاس ہذٰا میں ایسی ٹھوس منصوبہ بندی کی گئی‘ جس کے طفیل اللہ نے چاہا‘ تو بہت جلد مخالفین سونامی کی زد پر آ کر خس و خاشاک کی طرح بہہ جائیں گے اور مملکت خداداد کی گلیاں فقط مرزا صاحبان کے پھرنے اور دودھ اور شہد کی نہریں بہنے کے لیے کلی طور پر سنجیاں ہو جائیں گی۔ آخر میں حضرت شیخ چلی کی روح کے ایصال ثواب کے لیے اجتماعی دعا بھی کی گئی (منجانب:پی ٹی آئی)

ووٹر ہوشیار باش
ہر گاہ غریب عوام کو نوید ہو کہ بہت جلد میاں نوازشریف وطن پہنچ کر گرفتاری دیں گے اورپھر میاں دے نعرے وجن گے۔ اس ‘ مائنس ون مین شو‘ میں آپ کی ہم دردیوں کا جذباتی طوفان اٹھے گا اوراللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے ہماری انتخابی مہم میں جان پڑجائے گی۔ ہمارے رہنما جناب نوازشریف کے ساتھ جو کچھ ہونے والا ہے‘ ہم اسے مشیت ایزدی سمجھ کرقبول کریں گے اوراسے آپ سے کیش بھی کرائیں گے۔ ادھرآپ کی دعائوں سے سونامی سکڑ کر ندی ہو چلی اوردیگرجماعتوں کے بھی دوبارہ گھر بیٹھ کر اللہ اللہ کرنے کے دن قریب ہیں۔ حالات نے پی ٹی آئی‘ پی پی پی اور ایم کیو ایم جیسی غیرمقبول جماعتوں کے قیادت کو نادر موقع دیا ہے کہ وہ مزید پانچ سال تک خدا سے لَو لگانے کے ساتھ ساتھ چارپائیوں کے ادوان کسنے جیسی صحت افزا ورزش سے لطف اندوز ہو سکیں۔ اندر خانہ حقیقت یہ ہے متحرک صدر ن لیگ کی جان توڑ کوششوں اور وفاداری کی یقین دہانیوں سے ایک مرتبہ پھر ایسے خوش گوار اور اورمہرباں حالات پیدا ہوگئے ہیں کہ ملک بچانے کے لیے داخلی و خارجی بادشاہ گر قوتوں کی نظریں وطن ِعزیزکی خالق جماعت (یعنی ہم خاکساروں) ہی پر آ ٹھہری ہیں۔ دریں حالات عوام کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ بقائمی ہوش و حواس خمسہ ہمارے علاوہ کسی دوسری ”واٹر کٹ پارٹی‘‘ کو ووٹ دے کر اسے ضایع مت کریں۔ ان شا اللہ وہ دن دور نہیں جب اقتدار کی بہار آفریں رُت لوٹ کر آئے گی اور آپ کی محبوب قیادت ایک مرتبہ پھر سرکاری محلات (مراد سعودی عرب کے محلات ہر گز نہیں) میں جلوہ افروز ہوگی (المشتہر: پی ایم ایل ‘ن)

جیت ہماری ہوگی
ہم غیور اہل وطن کو خبردار کرتے ہیں کہ وہ جس کو مرضی ووٹ دیں‘ مگر ان شا اللہ جیت ہماری ہوگی۔ آپ چاہیں تو اپنی سہولت کے لیے اسے ‘جیپ ہماری ہوگی‘ بھی پڑھ سکتے ہیں۔ عاقل را اشارہ کافی است… امید ہے کہ ووٹرز نوشتہ دیوار پڑھ کر اپنے ووٹ (جنھیں وہ قیمتی ووٹ کہتے ہیں) رسوا نہیں کریں گے اور پولنگ کے روز جیپ پر مہر لگا کر اپنے محب وطن ہونے کا بھرپور ثبوت دیں گے۔ یہی ان کے حق میں بہتر ہے (جے جے پی۔ جیپ جیت پارٹی)

مٹی پائو
ہر گاہ بذریعہ اشتہار ہذا عوام الناس سے اپیل ہے کہ ناقدروں کو باوردی منتخب کراتے کراتے‘ ہم بصد شرمندگی مٹی ہو گئے‘ لہٰذا براہِ کرم ”رات گئی‘ بات گئی‘‘ کا مقولہ پیش نظر رکھ کر ہماری سابق کارکردگی پر بھی مٹی ڈالیں۔ نیز آپ ہمیں ہی ایک دفعہ پھر خدمت کا موقع عنایت فرمائیں‘ تا کہ ہماری مشہور زمانہ تیز رفتار ترقی سے آرایش چمن میں جو کسر رہ گئی تھی‘ اسے پورا کیا جا سکے۔ علاوہ ازیں لوٹے بہن بھائیوں سے بھی التماس ہے کہ وہ بھی اب ‘مٹی ڈالیں‘ اور اپنی اپنی نشستیں جیت کر واپس اپنی پارٹی میں آ جائیں کہ بقول میاں محمدؔ بخشؒ:
اُدھل گئیاں نوں داج نئیں لبھدے
شرماں والیاں نوں جھوٹے ڈولیاں دے
(اشتہاری: پی ایم ایل‘ ق)

انتباہ عوام
ہر گاہ گناہ گار عوام کو یاد دہانی کرائی جاتی ہے کہ یہود و ہنود کی مکروہ سازشوں کی بنا پر جمہوریت کا وقفہ خاصا طویل ہو چکا۔ کسی ‘مردِ مومن‘ کی راہ تکتے صالحین عظام کے دہانے خشک اور آنکھیں پتھرا گئیں؛ اگرچہ معاشرے کو سدھارنے کے خود اختیاری فریضے کی انجام دہی پوری جان فشانی سے جاری ہے‘ مگر خالی پیٹ کب تک؟ دریں حالات عوام کے لیے صالحین کرام کا حکم ہے کہ اس دفعہ خبیث و نجس لوگوں کو منتخب کرنے کی مشق رائیگاں ترک کر کے ہمیں اپنی نمایندگی کی بارگاہ میں داخل کریں۔ بصورت ِدیگر عوام کو انتباہ کیا جاتا ہے کہ کسی ضیاء الحق یا پرویز مشرف کی راہ ہم وار کرنے اور اس کے ہاتھ مضبوط کرنے میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہ کیا جائے گا۔ یاد رہے کہ نوازشریف کی نااہلی اور سزاکے بعد صاف و شفاف انتخابات کے راستے میں کوئی بت ایستادہ نہیں رہا‘ لہٰذا ہمارے علاوہ کسی دوسرے کو منتخب کر کے تضیع اوقات مت کریں۔ پس ہم نے اتمام حجت کر دیا ہے‘ پھر نہ کہنا کہ خبر نہیں ہوئی (الداعی الی الخیر: ایم ایم اے)
گم نام اشتہار
میرے لذیذ ہم وطنو! السلام علیکم !
سکوتِ ”لشکری‘‘ سمندر کی نیند ہوتا ہے
سکوں نہ جان‘ بظاہر جو اضطراب نہ ہو
پاکستان … پائندہ باد (منجانب:نام نہیں لکھا)

جوابی عوامی اشتہار
جب آئے گا کوئی انسان‘ بنے گا‘ نیاپاکستان (منجانب:عوام)
ہر گاہ بذریعہ اشتہار ہذٰا عوام الناس کو خوش خبری سنائی جاتی ہے کہ آپ کی دعاوں سے نوازشریف کو عدالت سے سزاہونے کے بعد ان کے سیاسی تابوت میں آخری کیل ٹھک چکا ہے۔ان شا اللہ بہت جلد جیل جا کر وہ اپنے انجام کو پہنچیں گے اورہم اپنی منزل پر۔ سو بغیر وقت ضایع کیے آیندہ پانچ سال تک آپ پر سونامی تحریک کی بلا شرکت ایرے غیرے و نتھو خیرے حکمرانی کرنے کی تمام تر تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔

(بشکریہ روزنامہ دُنیا)

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں