نواز شریف کو گرفتار کرنا ہے تو میں بھی ساتھ جیل جاﺅں گی؛ والدہ نواز شریف


 احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو قید کی سزا سنائی تو کیپٹن (ر) صفدر کو گرفتار کر کے جیل منتقل کر دیا گیا تاہم نواز شریف اور مریم نواز لندن میں موجود ہونے کے باعث تاحال گرفتار نہیں ہو سکے۔

مریم نواز شریف نے اپنے والد کے ہمراہ جمعہ 13 جولائی کو واپس آنے کا اعلان کر رکھا ہے جس کے پیش نظر نیب حکام نے انہیں ائیرپورٹ سے ہی گرفتار کرنے پر غور شروع کر دیا ہے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے رہنماﺅں اور کارکنان نے نواز شریف اور مریم نواز کے استقبال کی بھرپور تیاریاں بھی شروع کر دی ہیں.

نوائے وقت گروپ آف پبلی کیشنز کی منیجنگ ڈائریکٹر (ایم ڈی) رمیزہ مجید نظامی کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی والدہ نے اپنے بیٹے اور پوتی کا استقبال کرنے کیلئے لاہور ائیرپورٹ جانے کا اعلان کر دیا ہے۔ انہوں نے لکھا ”نواز شریف کی والدہ، آپی جی، بضد ہیں اور انہوں نے گھر والوں کو کہہ دیا ہے کہ وہ نواز شریف کا استقبال کرنے کیلئے لاہور ائیرپورٹ پر جائیں گی۔ میں نواز شریف کو گرفتار نہیں ہونے دوں گی، اگر گرفتار کیا تو میں بھی ساتھ جاﺅں گی، ان کی عمر 85 سال ہے۔“

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں