پاکستانی کرکٹر احمد شہزاد مثبت ڈوپ ٹیسٹ پر معطل


احمد شہزاد

Getty Images
حمد شہزاد عارضی معطلی کی وجہ سے قومی اور بین الاقوامی سطح پر کسی بھی طرح کی کرکٹ نہیں کھیل سکتے

پاکستان کرکٹ بورڈ نے مثبت ڈوپ ٹیسٹ پر کرکٹر احمد شہزاد کو معطل کرتے ہوئے انہیں نوٹس بھیج دیا ہے جس میں انہیں جواب دینے کے لیے کہا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے یہ نہیں بتایا کہ احمد شہزاد نے کونسی ممنوعہ شے کا استعمال کیا تھا۔

یاد رہے کہ اس سال اپریل میں پاکستان کپ ایکروزہ کرکٹ ٹورنامنٹ کے دوران احمد شہزاد کا ڈوپ ٹیسٹ لیا گیا تھا۔

نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے گذشتہ ماہ یہ اعلان کیا تھا کہ ایک کرکٹر کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آیا ہے لیکن اس کرکٹر کے نام کا اعلان تمام قانونی تقاضے پورے کیے جانے کے بعد کیا جائے گا۔

احمد شہزاد کے بارے میں مزید پڑھیے

پی ایس ایل کے ناکام پاکستانی بیٹسمین

چھ میچ بعد، بھولا سبق یاد آ ہی گیا

کیا احمد شہزاد نیا لڑکا ہے؟

پاکستان کرکٹ بورڈ نے منگل کے روز پہلی بار اس بات کی باضابطہ طور پر تصدیق کی کہ جس کرکٹر کے مثبت ڈوپ ٹیسٹ کے بارے میں بتایا گیا تھا وہ احمد شہزاد ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے احمد شہزاد کے ڈوپ ٹیسٹ کا نمونہ انڈین لیبارٹری بھیجا تھا جو واڈا سے منظور شدہ ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے اس ٹیسٹ کی رپورٹ کی مزید تصدیق کے لیے پاکستانی حکومت کی اینٹی ڈوپنگ ایجنسی کی خدمات بھی حاصل کی تھیں جس کے بارے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ اس کی رپورٹ منگل کو موصول ہوئی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے نوٹس ملنے کے بعد احمد شہزاد عارضی معطلی کی وجہ سے قومی اور بین الاقوامی سطح پر کسی بھی طرح کی کرکٹ نہیں کھیل سکتے۔

احمد شہزاد کے پاس یہ گنجائش موجود ہے کہ وہ اپنے ڈوپ ٹیسٹ کے بی سمپل کے تجزیے کی درخواست 18 جولائی تک کرسکتے ہیں یا پھر 27جولائی تک وہ اینٹی ڈوپنگ ٹریبونل کے سامنے پیش ہونے کے لیے کہہ سکتے ہیں۔

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 4588 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp