پی ٹی آئی کی خواتین رہنما عمران خان کو باقاعدگی سے اپنی برہنہ تصاویر بھیجتی تھیں: ریحام خان کا الزام


ریحام خان نے اپنی کتاب میں پی ٹی آئی کی معروف رہنما عظمیٰ کاردار کے حوالے سے الزام لگایا کہ عظمیٰ کاردار نہ صرف اپنے اعضائے مخصوصہ کی تصاویر باقاعدگی کے ساتھ عمران خان کو بھجواتی تھی بلکہ جب بھی وہ عمران خان سے روبرو ہوتی تو کوشش کرتی کہ وہ ان کے سامنے کھڑی رہے یا ان کے سامنے بیٹھ جائے۔ میری موجودگی میں بھی عظمیٰ کاردار اس بات کی پرواہ نہیں کرتی تھی اور عمران خان کے سامنے آنے کا راستہ بنا لیتی تھی۔’عظمیٰ کاردار نے علیم خان کے گھر مجھے ذاتی طور پر وارننگ دی کہ اب مجھے یہ سب برداشت کرنا ہوگا کیونکہ وہ اپنی حرکتوں سے باز نہیں آئیں گی‘۔

ریحام لکھتی ہیں کہ اس وقت مجھے اپنے شوہر پر اس قدر اعتماد تھا کہ میں نے سوچا کی عمران خان کو عندلیب یا عظمیٰ جیسے عورتوں میں کیا دلچسپی ہو سکتی ہے۔ تاہم ہماری طلاق کے کچھ عرصے بعد مجھے ایک پختون صحافی نے بتایا کہ عندلیب عباس مبینہ طور پر علم مسہری میں ایمسٹرڈم والی مہارتیں رکھتی ہیں۔ اس پر ریحام خان نے طنزیہ اضافہ کیا ہے کہ “ظاہر ہے کہ میں فنی طور پر اس قدر ہنر مند ہونے کی صلاحیت نہیں رکھتی تھی۔

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں