عمران خان منشیات کے حد سے زیادہ استعمال کے باعث مردانہ کمزوری کا شکار ہوئے: ریحام خان کا الزام


ریحام خان نے اپنی کتاب میں جہاں عمران خان کی جنسی زندگی کو موضوعِ بحث بنایا ہے وہیں کپتان پر منشیات کے بکثرت استعمال کا الزام بھی عائد کیا ہے۔ ریحام خان لکھتی ہیں جب بھی مجھے گھر میں نشے کے شواہد ملتے تو میں ناراضی کا اظہار کرتی اور عمران خان کی صحت کے حوالے سے فکر مندی دکھاتی تو وہ آگے سے کہتے بے بی! تم منشیات کے بارے میں جانتی ہی کتنا ہو؟ تم نے کبھی نشہ نہیں کیا، کوکین استعمال کرنا ایسے ہی ہے جیسے بندہ آدھا گلاس شراب پی لے۔ جب بھی ایسی صورتحال پیدا ہوتی ہر بار یہی فقرہ ناچتی آنکھوں کے ساتھ دہرایا جاتا، بلکہ عمران خان میرے رد عمل کا لطف اٹھاتا تھا۔

ریحام خان نے مزید لکھا ہے کہ شادی کے کچھ عرصے بعد مجھ پر تھکاوٹ کے آثار نمودار ہونے لگے۔ میں نے اپنی دوستوں کو بتایا کہ مجھے رات بھر جاگنا پڑتا ہے۔ اس پر میری دوستوں نے عمران کی مردانہ صلاحیت کے بارے میں کچھ مذاق وغیرہ کئے۔ حالانکہ مجھے معلوم تھا کہ حقیقت اس کے بالکل برعکس تھی۔ عمران خان ہر رات کئی مرتبہ غسل خانے میں چلے جاتے تھے۔ کچھ دیر بعد برامد ہوتے تو ہشاش بشاش ہوتے بلکہ جنسی لگاوٹ کے موڈ میں نظر آتے اگرچہ انہیں اس مقصد میں کم ہی “کامیابی” ملتی تھی۔

ریحام خان نے لکھا ہے کہ انہیں عمران کے اس طرح بار بار غسل خانے میں جانے پر تشویش ہوئی تو انہوں نے معاملات کا جائزہ لیا۔ معلوم ہوا کہ غسل خانے میں جگہ جگہ کوکین کے سفید پاؤڈر کے اجزا پائے جاتے ہیں۔ ویزلین لگے روئی کے پھاہے واش بیسن اور کھڑکی کی سل پر پڑے ملتے تھے۔

ریحام خان نے مزید لکھا کہ جب بھی عمران خان نشہ کرتے تو وہ انہیں منشیات کے سائیڈ افیکٹس کے حوالے سے بتاتیں اور سمجھاتیں کہ ان کی مردانہ کمزوری کے پیچھے منشیات کا استعمال ہے۔ میری اس بات پرعمران خان خوفزدہ ہو جاتا۔ میں نے اس کی منشیات چھڑانے کی بھرپور کوشش کی لیکن اس نے اپنا ہاتھ اس کام سے نہیں روکا۔ ریحام خان نے لکھا کہ سیاسی کیریئر میں بار بار کی ناکامیوں نے عمران خان کا حوصلہ توڑ دیا تھا، جوں جوں وقت گزرتا گیا میں نے دیکھا کہ منشیات کے استعمال میں شدت آتی جارہی ہے۔ میں یہی کر سکتی تھی کہ اسے منشیات کے خطرے سے آگاہ کروں لیکن اس کے نشے کی مقدار میں اضافہ ہی ہوتا چلا گیا۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں