بنوں: اکرم خان درانی کے قافلے کے قریب بم دھماکا، 4 افراد شہید


بنوں: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر اکرم خان درانی کے قافلے کے قریب بم حملے کے نتیجے میں 4 افراد جاں بحق اور 10 سے زائد زخمی ہوگئے، تاہم وہ خود اس واقعے میں محفوظ رہے۔

اکرم خان درانی قومی اسمبلی کے حلقے این اے 35 سے متحدہ مجلس عمل (ایم ایم اے)کے ٹکٹ پر پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے مدمقابل الیکشن لڑ رہے ہیں۔

پولیس کے مطابق اکرم خان درانی انتخابی جلسے میں شرکت کے لیے جارہے تھے کہ بنوں کے مضافاتی علاقے حوید میں ان کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا۔

واقعے میں پولیس اہلکارو سمیت 13 سے 14 افراد زخمی ہوئے، جنہیں طبی امداد کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرز اسپتال بنوں منتقل کردیا گیا۔

ڈسٹرکٹ پولیس افسر (ڈی پی او) خرم رشید نے بم دھماکے میں اکرم خان درانی کے محفوظ ہونے کی تصدیق کی۔

ریجنل پولیس آفیسر (آر پی او) بنوں کریم خان کے مطابق دھماکا اکرم خان درانی کے انتخابی جلسے سے 50 میٹر دور ہوا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ جلسہ گاہ کے اطراف 40کے قریب پولیس اہلکار تعینات تھے اور واک تھرو گیٹس بھی نصب کیے گئے تھے۔

اکرم خان درانی کے قافلے پر حملہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب 10 جولائی کو صوبائی دارالحکومت پشاور کے علاقے یکہ توت میں کارنر میٹنگ کے دوران خودکش حملے کے نتیجے میں پی کے 78 سے عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار ہارون بلور سمیت 22 افراد شہید جبکہ متعدد زخمی ہوگئے تھے۔
بشکریہ جیو نیوز۔

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں