نواز شریف کی والدہ کو نظر بند کر دیا گیا


 

نگراں حکومت پنجاب نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی والدہ بیگم شمیم کونظربند کردیا ہے۔ نوازشریف کی والدہ نے اپنے بیٹے کے استقبال کیلئے ائیرپورٹ جانے اور گرفتاری کی صورت میں ان کے ساتھ جیل جانے کا اعلان کر رکھا تھا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نوازشریف کی وطن واپسی کے موقع پر جہاں ن لیگی کارکنان کی پکڑ دھکڑ کا سلسلہ جاری ہے اور کئی رہنمائوں کو گھروں میں نظر بند کرنے کے احکامات دے دئیے گئے ہیں۔ وہیں نواز شریف کی والدہ کو بھی گھرمیں نظر بند کر دیا گیا ہے۔ نوازشریف کی والدہ بیگم شمیم شریف نے اپنے بیٹے کے استقبا ل کیلئے ائیرپورٹ جانے اور بیٹے اور نواسی مریم نواز کی گرفتاری کی صورت میں ان کے ساتھ جیل جانے کا اعلان کر رکھا تھا۔

گزشتہ روز اپنے پیغام میں بیگم شمیم شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کا بیٹا میرا بیٹا کل اپنے وطن جس کو اس نے روشن بنایا ہے۔ وہ کل وطن واپس آرہا ہے تاکہ میں پھر سے اس کا ماتھا چوم سکوں۔ انہوں نے کہا کہ میرے بیٹے نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن ر صفدر کے خلاف ناحق فیصلہ آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں ان تینوں کو جیل نہیں جانے دوں گی۔ اگر ان جیل بھیجا گیا تومیں بھی ساتھ جیل جاؤں گی۔ میرا ایمان ہے کہ تینوں بے گناہ ہیں۔ اللہ تعالیٰ ان کی حفاظت کرے گا۔ ظالموں کواللہ کی پکڑ اور خوف سے ڈرنا چاہیے۔ شمیم بیگم نے کہا کہ عدالت نے خود فیصلے میں لکھا ہے کہ کرپشن ثابت نہیں ہوئی۔ تو پھر میرے بچوں کو سزا اس بات کی دی جا رہی ہے۔

 

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں