مستونگ خود کش دھماکے میں شہید ہونے والوں کی تعداد 85 ہو گئی: 150 زخمی


بلوچستان کے علاقے مستونگ میں ہونے والے خودکش دھماکے بلوچستان عوامی پارٹی کے امیدوار نوابزادہ سراج رئیسانی سمیت 85 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں۔ ترجمان اسپتال کوئٹہ کے مطابق مستونگ کے علاقے درین گڑھ کے دھماکےمیں زخمی ہونے والے 100 سے زائد افراد کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے ۔

ڈپٹی کمشنر مستونگ کے مطابق پی بی 35 کے امیدوار سراج رئیسانی انتخابی مہم کے سلسلے میں جلسہ گاہ پہنچے تھے کہ وہاں دھماکا ہو گیا۔ موقع پر ہی 10 افراد جاں بحق ہوئے۔ سراج رئیسانی سمیت 100 سے زائد زخمی ہوئے جنہیں کوئٹہ اور مستونگ کے اسپتالوں میں منتقل کیا گیا۔

اسپتال ذرائع کے مطابق نوابزادہ سراج رئیسانی سمیت 15 افراد اسپتال پہنچتے ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے جس کے بعد تعداد بڑھتی رہی جو 85 تک پہنچ چکی ہے۔

بم ڈسپوزل اسکواڈ کے مطابق مستونگ میں ہونے والا دھماکا خودکش تھا ،دھماکے میں 16 سے 20 کلو دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا ۔ ڈپٹی کمشنر کے مطابق مبینہ حملہ آور کی باقیات اکٹھی کرلی گئی ہیں جبکہ سراج رئیسانی کے بھائی لشکری رئیسانی نے اپنے بھائی کی شہادت کی تصدیق کی ۔

واقعہ کے بعد پولیس، لیویز، ایف سی اور ضلعی انتظامیہ موقع پر پہنچ گئی اور واقعہ کی تحقیقات شروع کر دی گئی۔ نگران صوبائی وزیرداخلہ اور ضلعی انتظامیہ کے مطابق دھماکہ خودکش تھا تاہم اس حوالےسےمزید تحقیقات جاری ہیں۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں