عمران خان کو اس کی پیرنی بیوی لے ڈوبے گی: مفتی طارق مسعود


گزشتہ دنوں عمران خان کے پاک پتن میں بابا فرید گنج شکر کے مزار پر اپنی موجودہ بیوی بشری مانیکا کے ساتھ حاضری اور وہاں پر بوسہ دینے کے عمل کو مذہبی حلقوں میں کافی تنقیدی نظر سے دیکھا گیا ہے اس حوالے سے گرما گرم بحث ابھی جاری ہے ۔ اس موقع پر مشہور اسلامی اسکالر اور عالم دین مفتی طارق مسعود بھی اپنی راۓ دیے بنا نہ رہ سکے

مفتی طارق مسعود کا کہنا تھا کہ وہ کوئی سیاسی شخصیت نہیں ہیں اور نہ ہی انہوں نے اب تک یہ فیصلہ کیا ہے کہ ووٹ کس کو دیں گے مگر اس کے باوجود وہ عمران خان سے یہ کہنا چاہتے ہیں کہ اس پیرنی کے کہنے پر مت چلو، یہ تمھیں مروا ڈالے گی۔ ان کا مزید یہ کہنا تھا کہ میں نے لوگوں سے سنا ہے کہ یہ شادی بھی اسی لیے کی گئی ہے کہ عمران خان کو یہ بیگم وزیر اعظم بنوا دے گی۔

اس حوالے سے مفتی صاحب کا یہ بھی کہنا تھا کہ جس نے بھی روحانی شخصیات کی پیروی دنیاوی مفادات کے لیے کی، وہ تباہ و برباد ہو گیا۔ اسی وجہ سے عمران خان کو بھی چاہیے کہ وہ اپنی بیگم سے پیار کریں۔ اس کا خیال رکھیں مگر اس کی اطاعت اس درجے نہ کریں کہ جس سے انہیں نقصان ہو۔

اس حوالے سے انہوں نے واضح طور پر مثال دیتے ہوئے بتایا کہ چونکہ عمران خان نے مزار پر بوسہ بیوی کے کہنے پر دیا تھا تو مذہبی حلقے اس حوالے سےان کے مخالف ہو گے اور بہت سارے لوگوں نےان کو ووٹ ڈالنے سے توبہ کر لی جو کہ ایک بڑا نقصان ہے وہ اگر اسی طرح بیوی کے کہنے پر چلتے رہے تو اس سے ان کو نقصان کے علاوہ کچھ بھی حاصل نہ ہو گا

مفتی طارق مسعود کا مزید کہنا تھا کہ انسان روحانی رہنمائی اللہ سے قرب حاصل کرنے کے لیے اگر لے تو اس سے اس کو دینی فوائد حاصل ہوتے ہیں اور یہی اس رہنمائی کا حقیقی مقصد بھی ہے مگر اگر کوئی اس رہنمائی سے جادو ٹونے اور وظائف کرنے کا کام لے تو اس سے اس کو بربادی کے سوا کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں