سات ہزار 346 ووٹ مسترد ہوئے؛ خواجہ عثمان کے موقف پر لاہور ہائیکورٹ کا خواجہ آصف کی کامیابی کا بھی نوٹیفکیشن روکنے کا حکم


عدالت حلقے میں دوبارہ گنتی کروانے کا حکم صادر کرے، درخواست گزار (فوٹو: فائل)

عدالت حلقے میں دوبارہ گنتی کروانے کا حکم صادر کرے، درخواست گزار

لاہور ہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن کو این اے 73 سیالکوٹ سے مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ آصف کی بھی کامیابی کا نوٹی فکیشن روکنے کا حکم دے دیا۔

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مامون الرشید نے تحریک انصاف کے عثمان ڈار کی درخواست پر سماعت کی اور الیکشن کمیشن اور خواجہ آصف کو نوٹس جاری کرتے ہوئے خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹی فکیشن جاری کرنے سے روک دیا۔

پی ٹی آئی رہنما عثمان ڈار نے ایڈووکیٹ انیس ہاشمی اور ایڈووکیٹ تجمل گوندل کی وساطت سے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی جس میں مؤقف اختیار کیا کہ سیالکوٹ این اے 73 سے انتخاب لڑا اور دوسرے نمبر پر رہا۔ خواجہ آصف سے صرف 1406 وٹوں سے شکست ہوئی جب کہ میرے حلقے میں 7ہزار 346 ووٹ مسترد ہوئے اور ریٹرننگ افسر نے فارم 45 پولنگ ایجنٹس کو فراہم نہیں کیا۔

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ ریٹرننگ افسر کو حلقے کی دوبارہ گنتی کی درخواست دی جسے مسترد کردیا گیا لہذا عدالت حلقے میں دوبارہ گنتی کروانے کا حکم صادر کرے اور عدالت دوبارہ گنتی مکمل ہونے تک خواجہ آصف کی کامیابی کے نوٹی فکیشن کو روکنے کا حکم دے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں