افغانستان میں خودکش حملے میں 20 افراد ہلاک


kabulافغانستان کے دارالحکومت کابل میں عدالتی ملازمین کی گاڑی کے قریب خودکش حملے میں 10 افراد ہلاک ہوگئے۔
امریکی خبر رساں ایجنسی ’اے پی‘ کے مطابق افغان وزارت داخلہ کے نائب ترجمان نجیب دانش نے کہا کہ خودکش بمبار نے عدالتی ملازمین کی گاڑی کے قریب آکر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔انہوں نے کہا کہ شہر کے مغربی علاقے میں ہونے والے خودکش حملے میں 4 افراد زخمی بھی ہوئے۔ہلاک ہونے والوں میں عدالتی ملازمین اور عام شہری شامل ہیں، جبکہ حملے کی ذمہ داری تاحال قبول نہیں کی۔
خودکش حملہ افغان طالبان کی جانب سے ملا اختر منصور کی ڈرون حملے میں ہلاکت کی تصدیق اور مولوی ہیبت اللہ اخونزادہ کو نیا طالبان امیر مقرر کیے جانے کے اعلان کے چند گھنٹے بعد کیا گیا۔
کابل میں آخری بڑا حملہ 19 اپریل کو کیا گیا تھا، جب افغانستان کے خفیہ ادارے نیشنل سیکیورٹی ڈائریکٹوریٹ (این ڈی ایس) کے دفتر میں ہونے والے خودکش حملے میں 64 افراد ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہوئے تھے۔
طالبان کی جانب سے نئے ا?پریشن کے اعلان کے بعد گزشتہ ماہ کے اوائل میں افغان صوبے تخار میں سڑک کنارے نصب بم حملے میں اعلیٰ سیکیورٹی افسر سمیت 8 افغان سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔
اس دھماکے سے دو روز قبل جلال ا?باد کے قریب افغان فوج میں بھرتی ہونے والے افراد کی بس پر بھی خودکش حملہ کیا گیا تھا، جس کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے تھے۔


Comments

FB Login Required - comments