بچی کے باپ کو قدموں میں گرانے والا کلرک خود قدموں پر گر گیا


سندھ کے شہر سعید آباد میں واقع کالج کا وہ بدمعاش کلرک جس نے رشوت نہ دینے کے معاملے پر ایک بیٹی کے باپ کو قدموں پر گرا کر معافی منگوائی اور آج اس کا غرور پاش پاش ہوگیا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک شخص کالج میں اپنی بیٹی کے داخلے کے لئے کلرک کی منت سماجت کررہا ہے اورکہہ رہا ہے کہ اگرکالج میں بیٹی کا داخلہ نہیں دے رہے تو مارک شیٹ واپس دے دیں۔

لیکن کلرک نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے باپ کو اپنے قدموں میں گر کر معافی مانگنے پرمجبورکردیا اورکسی کی ایک نہ سنی۔ بے بس باپ کالج میں داخلہ نہ دینے اورمارک شیٹ واپس نہ ملنے پر با اثر کلرک کے پاؤں میں گرکرمعافی مانگتا رہا۔

سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے کے بعد صوبائی وزیرتعلیم سید سردارشاہ نے آج پیر کے روز ڈائریکٹر کالجز حیدرآباد پروفیسر ڈاکٹر عبدالحمید چنڑ، گورنمنٹ ڈگری کالج کے پرنسپل، بے رحم کلرک اور متاثرہ شخص کو کراچی دفتر میں ذاتی حیثیت سے پیش ہونے کا حکم دے دیا جب کہ واقعے سے متعلق ڈائریکٹر کالجز حیدرآباد سے رپورٹ بھی طلب کرلی۔ ڈائریکٹر کالجز حیدرآباد پروفیسر ڈاکٹر عبدالحمید چنڑ نے نیو سعید آباد گورنمنٹ ڈگری کالج کے سینیئر کلرک کومعطل کردیا تھا۔

آج اس کلرک سے جب لفظ انٹرمیڈیٹ کی ہجے پوچھی گئی تو وہ نہ بتا سکا۔ اس ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ غریب ظفراللہ سے مغرور کلرک جانب کیریو نے قدموں کو چھو کر معافی مانگی، اسے معطل کیا جاچکا ہے جبکہ اس کے خلاف محکمانہ کارروائی بھی پراسس میں ہے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں