سینیٹر مشاہداللہ  کے بھائی ساجد اللہ ہیتھرو ایئر پورٹ پر سٹیشن منیجر کے عہدے سے ہٹا دیے گئے


وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری اور لیگی سینیٹر مشاہداللہ خان کی لفظی جنگ کی لپیٹ میں رشتے دار بھی آگئے ہیں۔ حکومت نے مشاہداللہ خان کے بھائی ساجداللہ خان کو ان کے عہدے سے ہٹادیا ہے۔

سینیٹر مشاہداللہ خان کے بھائی ساجداللہ خان لندن کے ہیتھرو ایئر پورٹ پر پی آئی اے کے سٹیشن منیجر کے عہدے پر تعینات تھے تاہم بدھ کو انہیں اپنا عہدہ چھوڑ کر فوری طور پر پاکستان پہنچنے کی ہدایت کردی گئی ۔ ساجداللہ خان کو نہ تو کوئی نوٹس دیا گیا اور نہ ہی ان کا متبادل بھجوایا گیا جس کے باعث پی آئی اے کو ہیتھرو ایئر پورٹ پر آپریشنز میں مشکلات کا سامنا ہے۔

ساجداللہ خان نے حکومت کی جانب سے جاری ہونے والے اچانک حکم نامے پر حیرت کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ جب کسی افسر کا ٹرانسفر ہوتا ہے تو اس سے پہلے دو مہینے کا وقت دیا جاتا ہے تاکہ نیا افسر جا کر اپنی ذمہ داریاں سنبھال سکے ۔ ساجداللہ خان نے کہا کہ حکومت کی جانب سے مجھے تو اتنا ٹائم بھی نہیں دیا گیا کہ اپنے مالک مکان کو ہی نوٹس دے سکوں اور اپنا سامان پیک کر سکوں، شاید مجھے مشاہداللہ خان کا بھائی ہونے کی سزا دی جا رہی ہے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں