تارا کو گولی کس نے ماری؟


گاڑی چلاتی اس نوجوان عرب ماڈل کو گولی مار دی گئی، اور وجہ ایسی کہ جان کر تمام عرب لڑکیاں خوفزدہ ہوجائیں کیونکہ۔۔۔

 

عراق میں ایک نوجوان ماڈل کو ٹریفک سگنل پر گولی مار کر قتل کر دیا گیا ہے اور اس واردات کی وجہ ایسی ہے کہ جان کر تمام عرب لڑکیاں خوفزدہ ہو جائیں۔ میل آن لائن کے مطابق یہ واقعہ 27ستمبر کو پیش آیا۔ 22سالہ تارا فیریس نامی یہ ماڈل اپنی لگژری گاڑی میں سوار تھی اور اسے خود ہی ڈرائیو کر رہی تھی۔ جب وہ سگنل پر کھڑی تھی تو ایک موٹرسائیکل سوار شخص اس کے قریب آ کر رکا اور پستول نکال کر اسے تین گولیاں مار دیں جس سے اس کی موقع پر ہی موت واقع ہو گئی۔

بتایا گیا ہے کہ عراق میں کئی ایسے گروپ ہیں جو خواتین کے مغربی لائف سٹائل اپنانے اور ماڈلنگ و اداکاری کرنے کے خلاف ہیں۔ یہ گروپ پے درپے ماڈلز اور اداکاراﺅں کو قتل کر رہے ہیں۔ اب تک سواد العلی، رافیف الیاسری اور راشا الحسن سمیت کئی ماڈلز ان کے ہاتھوں قتل ہو چکی ہیں ۔ تارا فیریس کو قتل کرنے کے بعد ان شدت پسندوں کی طرف سے ایک اور 23سالہ ماڈل و ٹی وی میزبان شیما قاسم کو بھی دھمکی دی گئی ہے کہ اگلا نمبر تمہارا ہے۔

شیما قاسم نے 2015ءمیں ’مس عراق ‘ کا مقابلہ بھی جیتا تھا۔ہیومن رائٹس کی کارکن ہینا ایڈور کا کہنا ہے کہ ”عراق میں جدید طرزِ زندگی اپنانے والی خواتین کے قتل کی پے درپے وارداتیں انتہائی پریشان کن ہیں۔عراق میں کئی ایسے گروپ ہیں جو ان معروف خواتین کو قتل کرکے معاشرے کو خوفزدہ کرنا چاہتے ہیں۔ یہ لوگ چاہتے ہیں کہ خواتین گھروں سے باہر نہ نکلیں۔“

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں