داعش نے 19 یزیدی خواتین زندہ جلا ڈالیں


yazeediبرطانوی اخبار انڈیپنڈنٹ کے مطابق 19 یزیدی خواتین کو داعشی جنگجوؤں سے جنسی تعلق قائم کرنے سے انکار کرنے پر لوہے کے پنجروں میں بند کر کے زندہ جلا ڈالا گیا۔

مقامی انسانی حقوق کے کارکنان کے مطابق داعش کے جنگجوؤں نے عراق کے شہر موصل میں کھلے عام 19 یزیدی خواتین کو زندہ جلا ڈالا ہے۔

لوکل میڈیا کے کارکن عبداللہ الملا نے کرد اے آر اے نیوز ایجنسی کو بتایا کہ  “ان خواتین کو داعش کے جنگجوؤں سے جنسی تعلق قائم کرنے سے انکار پر سزا دی گئی”۔ نیوز ایجنسی کے مطابق ایک عینی شاہد نے بتایا کہ ” ان 19 خواتین کو سر عام سینکڑوں لوگوں کے سامنے زندہ جلایا گیا۔”

“انہیں اس خوفناک سزا سے بچانے کے لئے کوئی کچھ  نہیں کر سکتا تھا۔”

شمال مغربی عراق کے شہر سنجار پر اگست 2014 میں داعش کے قبضے کے بعد ہزاروں یزیدی خواتین داعش کی قید میں آ گئی تھیں۔


Comments

FB Login Required - comments