خاتون سے بات کرتے ہوئے بھارتی کشمیر کے مسلم مذہبی عالم کی شرمناک ویڈیو


بھارتی میڈیا کشمیری مسلمانوں کے خلاف پراپیگنڈے کا کوئی موقع جانے نہیں دیتا لیکن ایسا بھی ہوتا ہے کہ کچھ افراد کی حماقتوں اور غلطیوں سے پوری قوم کو شرمندگی اٹھانا پڑتی ہے۔

بھارتی ٹی وی ”ٹائمز ناﺅ“ نے ایک ویڈیو چلائی ہے جس میں دکھائی دینے والے شخص کا نام قاری احمد یٰسین اور تعلق جنوبی کشمیر سے بتایا گیا ہے۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ شخص سوشل میڈیا پر کسی سے بات کر رہا ہے اور ساتھ خود لذتی میں بھی مشغول ہے۔ مذکورہ ٹی وی چینل کا کہنا ہے کہ یہ شخص ایک لڑکی کے ساتھ ویڈیو چیٹ کرتے ہوئے خود لذتی میں مصروف ہے ۔ اسے جنوبی کشمیر کا ایک سینیئر مذہبی سکالر بتایا گیا ہے، جسے ماننے والوں کی تعداد بہت بڑی ہے۔

ٹی وی چینل کے رپورٹر کا کہنا تھاکہ ”اس ویڈیو نے قاری احمد یٰسین کی اصل حقیقت سے پردہ اُٹھا دیا ہے اور اس کے نظریات پر عمل کرنے والوں کیلئے بھی یہ واقعہ آنکھیں کھول دینے کے لئے کافی ہے۔“ رپورٹر کا یہ بھی کہنا تھا کہ مذہبی سکالر کے روپ میں یہ شخص نوجوان لڑکیوں کو ورغلا کر اپنی ناجائز خواہشات کی تکمیل کے لئے استعمال کرتا ہے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں