جب ایک شوہر بیٹی کی سکول ٹیچر کے ساتھ رنگے ہاتھوں پکڑا گیا


’میں اپنی بیٹی کے کلاس روم کے باہر کھڑی تھی، اندر دیکھا تو میرا شوہر یہ انتہائی شرمناک کام کررہا تھا‘

 

کمسن بیٹی کو لینے کے لئے سکول جانے والی ایک خاتون کے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ بیٹی کے کلاس روم میں کیسا قیامت خیز منظر اُس کا منتظر تھا۔ اس خاتون کو اُس وقت زندگی کا سب بڑا جھٹکا لگا جب دیکھا کہ اُس کا شوہر پہلے ہی بیٹی کے کلاس روم میں موجود تھا اور خاتون ٹیچر کے ساتھ بوس و کنار میں مصروف تھا۔ برطانوی خاتون نے اپنی زندگی کے اس المناک واقعے کا ذکر ویب سائٹ kidspot پر کیا ہے۔

یہ خاتون بتاتی ہیں کہ ”میری چھ سالہ بیٹی میلوڈی کو ایک دن میرا شوہر سکول سے لینے گیا اور پھر میں نے دیکھا کہ وہ اکثر ہی اس کی چھٹی کے ٹائم سے پہلے گھر پہنچ جاتا تھا۔ وہ کہتا کہ میلوڈی کو میں لے آتا ہوں، اور میں سمجھتی رہی کہ وہ بہت ہی پیار کرنے والا باپ ہے جو جلد از جلد کام ختم کر کے گھر پہنچتا ہے تا کہ بیٹی کو سکول سے لا سکے۔“

خاتون کے سامنے اصل حقیقت کچھ عرصے بعد آئی۔ وہ لکھتی ہیں کہ ”ایک دن میلوڈی کے سکول میں ایک تقریب تھی جس میں شرکت کرنے کے لئے میں بھی پہنچ گئی۔ بچے تقریب میں شرکت کے لئے جمع ہو رہے تھے اور میں نے سوچا کہ پہلے میلوڈی کو کلاس میں دیکھ لوں۔ کلاس روم کا دروازہ بند دیکھ کر میں واپس ہونے والی تھی کہ کھڑکی سے میری نظر اندر پڑی اور میرے قدم وہیں جم گئے۔ اندر میلوڈی کی کلاس ٹیچر کلاریسا موجود تھی جسے میرے شوہر نیتھن نے اپنے بازﺅوں میں سمیٹ رکھا تھا۔ میں تو جیسے وہیں ساکت ہو کر رہ گئی تھی۔ اتنے میں دروازہ کھلا اور میں نے آنسو بہاتے ہوئے باہر کی جانب قدم بڑھا دئیے۔ نیتھن میرے پیچھے نہیں آیا۔ کئی گھنٹے بعد وہ گھر پہنچا اور آتے ہی سامان پیک کرنا شروع کر دیا۔ اُس دن وہ میرا گھر چھوڑ کر کلاریسا کے پاس منتقل ہو گیا۔ اب وہ میاں بیوی ہیں، اور میں میلوڈی کے ساتھ تنہا زندگی گزار رہی ہوں۔“

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں