روحی بانو منظر عام پر آ گئیں: پراسرار گمشدگی کا راز فاش کر دیا


ماضی کی معروف اداکارہ روحی بانو منظر عام پر آگئیں اور کہا کہ ان کے لاپتا ہونے کی باتیں غلط ہیں۔ وہ ایک سال سے ترکی میں رہ رہی تھیں۔

اپنی بہن روبینہ اور بھائی نصیر کی موجودگی میں لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے روحی بانو نے کہا کہ ان کی بہن ان سے گلبرگ لاہور کےگھر کا آدھا حصہ مانگ رہی ہے، وہ بھلا آدھا گھر کیسے دے دیں؟ انہوں نے مزید کہا کہ دو سال قبل گلبرگ کے گھر میں ان پر قاتلانہ حملہ ہوا تھا، ان کی گردن پر 14 ٹانکے لگے تھے۔

صدارتی ایوارڈ یافتہ اداکارہ روحی بانو کی پراسرار گمشدگی کا راز فاش ہوگیا، وہ آج خود ہی میڈیا کے سامنے آ گئیں۔ انہوں نے بتایا کہ جائیداد ہتھیانےکیلئے کچھ لوگ ان کی جان لینے کے درپے ہیں، جن سے بچنے کے لئے وہ ترکی چلی گئی تھیں۔ انہوں نےجب یہ ذکرکیا کہ ان کی بہن روبینہ بھی پراپرٹی سے آدھا حصہ مانگتی ہیں، تو روبینہ جھٹ سے انہیں ٹوکنے لگیں۔

پریس کانفرنس میں روحی بانو کچھ ڈری ڈری اور سہمی نظرآئیں۔ روبینہ نے روحی بانو کے ہاتھ میں ایک پیپر تھما دیا، جسے روحی بانو نے پڑھ کر سنایا۔ پیپر پر لکھا تھا کہ پراپرٹی ڈیلر ان کی جائیداد ہتھیانا چاہتےہیں۔

پیپر پر یہ بھی تحریر تھا کہ اس جائیداد کیلئےان کا بیٹا بھی قتل کر دیا گیا تھا۔ دو سال پہلے ان پر بھی قاتلانہ حملہ ہواتھا، وہ جان بچانے کیلئے پہلے ترکی چلی گئی تھیں، پھر بھائی کے گھر رہنےلگیں۔

روحی بانو نےچند ایسے انکشافات بھی کر دیئے، جو ان کی بہن روبینہ کو ناگوار گزرے، انہوں نےبتایا کہ وہ ترکی میں بھی فاؤنٹین ہاؤس میں رہیں، اس پر بہن نے ٹوکتے ہوئے کہا کہ نہیں آپ اپنے بھانجے کے گھر پر رہی تھیں۔ روحی بانو نے وزیراعظم عمران خان اور چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار سے تحفظ کی اپیل کی ہے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں