وہ وقت دور نہیں جب پاکستانی فلمیں بھی آسکر جیتیں گی: مہوش


mehwishپاکستان میں جدید ٹیکنالوجی سے بننے والی فلموں کی کامیابی کی ضمانت سمجھی جانے والی اداکارہ وآئٹم گرل مہوش حیات نے کہا ہے کہ آسکر ایوارڈ کے لیے پاکستانی فلموں کی نامزدگی بہت بڑی کامیابی ہے۔
فلمسازی کے معیارمیں بہتری نے روٹھے ہوئے فلم بینوں کو دوبارہ سے سینماگھروں تک پہنچا دیا ہے۔ منفرد موضوعات پربننے والی ایکشن ، رومانس اورمزاح سے بھرپورفلمیں شائقین کی توجہ کا مرکز بنی ہوئی ہیں۔ اگراسی طرح فلمسازی کے شعبے میں تعداد کے ساتھ معیارکا خیال رکھا گیا تووہ دن دورنہیں جب پاکستانی فلمیں اوران سے وابستہ لوگوں کے چاہنے والے دنیا کے کونے کونے میں ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہار مہوش حیات نے ایک نجی ٹیلی ویژن چینل سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔
انھوں نے کہا کہ فنون لطیفہ میں فلم ایک ایسا شعبہ ہے جولوگوں کے سب سے قریب ہے۔ پاکستان فلم انڈسٹری کے معروف فنکاروں کے چاہنے والوں کی بڑی تعداد آج بھی موجود ہے، جوان کے کام کوپسند کرتی تھی بلکہ ان کے متعارف کروائے گئے ملبوسات، ہیئرسٹائل ، جیولری ، جوتے اوردیگر کو آج بھی سراہتی ہے۔ یہ ایک فلم سٹارکی سب سے بڑی خوبی اورکامیابی مانی جاتی ہے۔ آج کا دورجدید ٹیکنالوجی ہے اوراب جس طرح سے فیشن کی دنیا میں حیرت انگیز تبدیلی آچکی ہے، اسی طرح فلمسازی کے کام اوراس شعبے سے وابستہ لوگوں کی سوچ بھی بدل چکی ہے۔
اب کارپوریٹ سیکٹر فلم سازی کے شعبے میں نمایاں کام کررہا ہے۔ ان کی بدولت جہاںنوجوان فلم میکرمنفرد موضوعات پرفلمیں بنارہے ہیں،وہیں کمرشل ازم کے فروغ اورکارپوریٹ سیکٹرکی پراڈکٹس کی تشہیربھی بڑی خوبی سے ہورہے ہے۔ یہ وقت کی ضرورت ہے کیونکہ پاکستان میں فلم انڈسٹری جس بحران سے دوچارتھی، اس کی بہتری کی بات کرنا ایک دورمیں بالکل جھوٹ لگتا تھا مگراب صورتحال بہتر ہورہی ہے۔
نوجوان فلم میکراورفنکارمل کرایک ایسے ٹریک پرآگے بڑھ رہے ہیں جس کے ذریعے بہت جلد ہم انٹرنیشنل مارکیٹ تک رسائی پالیں گے۔ آسکرایوارڈز تک پاکستانی فلموں کاپہنچنا ایک دورمیں خواب لگتا تھا مگراب ہماری فلموں کی نامزدگی ہونے لگی ہے اوروہ وقت دورنہیں جب ہماری فلمیں نہ صرف آسکر ایوارڈ جیتاکریں گی بلکہ ہمارے فنکاروں کوہالی ووڈ میں کام کی پیشکش ہوا کرے گی۔


Comments

FB Login Required - comments