قیمتوں میں کمی کے ساتھ ہی پٹرول پھر غائب


petrolپٹرول سستا ہوکر بھی نایاب ہوگیا ، ملک کے مختلف علاقوں میں پٹرول پمپ مالکان نے پٹرولیم مصنوعات کی سپلائی بند کردی ہیں اور کہیں کہیں پمپ ہی بند ہیں پٹرول سستا ، لیکن پھر بھی نایاب۔
خاص طورپر کوئٹہ اور پشاور کے ساتھ ملک کے متعدد علاقوں میں پٹرول پمپ مالکان نے سپلائی بند کردی ہے جس سے عوام کو مشکلات کا سامنا ہے، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں آج سے کمی نافذ ہوچکی ہے جس کے مطابق پٹرول اور ڈیزل کی قیمت پانچ پانچ روپے فی لٹر کم ہوگئی ہے۔
کمی پر پٹرولیم مصنوعات کی قلت اس لیے بھی نظر آتی ہے کہ پہلے سے اندازہ ہونے پر پٹرول پمپس مالکان پرانی قیمت پرسٹاک کے لیے تیل نہیں خریدتے، یوں موجود سٹاک ختم ہونے سے پٹرولیم مصنوعات کی قلت سی نظر آتی ہے۔
اب نئی قیمت پر سپلائرز کو آرڈر کیا جائے گا تو انہیں بھی سستا ملے گا اوروہ بھی آگے اپنے منافع کے ساتھ فروخت کریں گے ،لیکن آج کے دن تو عوام نے پریشانی اٹھائی اور اس کا اظہار بھی کیا کہ تیل سستا ہوکر بھی ان کی پہنچ سے دور ہوگیا ہے۔
دوسری طرف پی ایس او کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ان کی طرف سے سپلائی معمول کے مطابق ہے ، نجی کمپنیوں سے پوچھا جائے کہ ان کے پمپس پرقلت کیوں ہوئی، پٹرول اور سی این جی ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ شام تک پٹرول کی رسد معمول پر آنے کا امکان ہے۔


Comments

FB Login Required - comments