سیالکوٹ میں سوتیلی ماں کے بہیمانہ تشدد سے لڑکی ذہنی توازن کھو بیٹھی


\"\"

سیالکوٹ: تھانہ کینٹ کے علاقے کی رہائشی سوتیلی ماں نے بیٹی پر بہیمانہ تشدد کر کے اسے ذہنی طور پر مفلوج کردیا۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق سیالکوٹ کے تھانہ کینٹ کی حدود میں سوتیلی ماں نے 15 سالہ بیٹی پر بہیمانہ تشدد کرکے اسے ذہنی مفلوج کردیا۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ خاتون نے لڑکی کو گھر کے کام نہ کرنے پر تشدد کا نشانہ بنایا اور اس کے بال بھی مونڈھ دیئے، سنگدل ماں بچی کو کمرے میں بند کر کے کئی روز تک ڈنڈوں سے تشدد کا نشانہ بناتی رہی اور بچی کی آنکھوں میں مرچیں بھی ڈالتی رہی۔

ایس ایچ او تھانہ کینٹ آصف گیلانی کا کہنا ہے کہ  تشدد کا نشانہ بننے والی ثنا کو بازیاب کرالیا گیا ہے تاہم بچی اس وقت کوئی بیان دینے سے قاصر ہے اور ذہنی مفلوج لگ رہی ہے۔ ابتدائی تفتیش کے مطابق بچی کا والد عبدالسلام بیرون ملک مقیم ہے  پولیس نے سوتیلی ماں رخسانہ کے خلاف بچی کے تایا محمد اقبال کی مدعیت میں دفعہ 337 بی کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

ایس ایچ او  کے مطابق ابتدائی طور پر ایف آئی آر میں بال کاٹنے کی دفعات شامل کی گئی ہیں بچی کو میڈیکل کے لئے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے اور میڈیکل رپورٹ آنے کے بعد دیگر دفعات شامل کی جائیں گی تاہم  ملزمہ رخسانہ کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیا ہے۔

image_pdfimage_printPrint Nastaliq

Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں