ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا سندھ ہائیکورٹ کا فیصلہ چیلنج


\"\"

وفاقی وزارت داخلہ نے ماڈل ایان علی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے سے متعلق سندھ ہائی کورٹ کے حکم کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کردی ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا کہ ایان علی کا نام محکمہ داخلہ پنجاب کی درخواست پر ای سی ایل میں شامل کیا گیا تھا۔ اس لئے اس سلسلے میں اس قسم کی کسی بھی درخواست کی سماعت سندھ ہائی کورٹ کے دائرہ اختیار میں نہیں تھی،اس کے علاوہ کیس کی سماعت کے دوران پنجاب حکومت کا موقف بھی نہیں سنا گیا۔

درخواست میں مزید موقف اختیار کیا کہ سندھ ہائی کورٹ نے میرٹ پر فیصلہ دیا لیکن درخواستوں کے قابل سماعت ہونے کا جائزہ نہیں لیا، سندھ ہائی کورٹ کے جج جسٹس کے کے آغاز دو مرتبہ ایان علی کیس سن چکے تھے جس کے باعث انہیں تیسری مرتبہ کیس نہیں سننا چاہیے تھا۔

واضح رہے کہ ایان علی کو 2015 میں راولپنڈی ایئرپورٹ سے کروڑوں ڈالر مالیت کی غیر ملکی کرنسی اسمگل کرنے کے الزام میں گرفتار کی گئی تھیں اور ان پر غیر ملکی کرنسی اسمگلنگ اور کسٹم آفیسر کے قتل کا مقدمہ درج ہے۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اسی بارے میں: ۔  زخمیوں کی عیادت کیلئے جنرل قمر جاوید کا دورہ پارا چنار