متحد رہ کرملک دشمن عناصر سے لڑنے کا وقت ہے: وزیراعظم


\"\"وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ ہماری ذمہ داری ہے کہ آنے والی نسلوں کو روشن مستقبل دیں اس لیے فوج اورسکیورٹی ادارے دشمن کو نیست و نابود کردیں۔
سیہون شریف میں وزیر اعظم نواز شریف کی سربراہی میں اجلاس ہوا ، جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ، گورنر محمد زبیر اور دیگر اعلیٰ سیاسی و عسکری حکام شریک تھے۔ اجلاس کے دوران چیف سیکرٹری سندھ نے وزیراعظم نواز شریف کو مزار پر کئے گئے سکیورٹی اقدامات اور گزشتہ روز ہونے والے خودکش دھماکے سے متعلق بریفنگ دی۔
وزیر اعظم نے کہا کہ امن و خوشحالی کی منزل پر ہرقوم کو ظلم و بربریت کا سامنا رہا ہے، ہم گزشتہ کئی برسوں سے اندرونی اور بیرونی دشمنوں سے لڑ رہے ہیں ، ہماری ذمہ داری ہے کہ آنے والی نسلوں کو روشن مستقبل دیں، یہ متحد رہ کرملک دشمن عناصر سے لڑنے کا وقت ہے، یہ جنگ ہم اپنی اعلیٰ اقدار کے تحفظ کے لئے لڑ رہے ہیں، یہ جنگ ختم ہو گی اور اس میں ہماری فتح ہو گی، ہمیں متحد رکھنے والی مثبت اقدار ہمیشہ زندہ رہیں گی۔ فوج اورسکیورٹی ادارے دشمن کو نیست و نابود کردیں۔
اس سے قبل وزیراعظم نوازشریف نواب شاہ پہنچے تو گورنر و وزیراعلیٰ سندھ اور دیگر اہم شخصیات نے ان کا استقبال کیا جس کے بعد وزیراعظم نواز شریف نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار، وزیرخزانہ اسحاق ڈار اور قومی سلامتی کے مشیر ناصرجنجوعہ کے ہمراہ نوابشاہ ہسپتال کا دورہ کیا اور زخمیوں کی عیادت کی۔ زخمیوں کی عیادت کے بعد سیاسی و عسکری قیادت سیہون میں واقع لعل شہباز قلندر کے مزار میں پہنچی جہاں جائے وقوعہ کا جائزہ لیا۔
وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور ہسپتال انتظامیہ نے وزیراعظم کو مریضوں کی صحت سے متعلق آگاہ کیا جبکہ وزیراعظم نے عیادت کرنے کے ساتھ مریضوں کو ہر ممکن طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت بھی کی۔

اسی بارے میں: ۔  پاناما کیس جے آئی ٹی پرحسین نوازکے اعتراضات پر سماعت 29 مئی کو ہوگی

Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔