ترکی میں فوجی قافلے کے قریب دھماکے میں 7 فوجی ہلاک


\"turky\"ترکی کی مسلح افواج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ملک کے جنوب مشرقی کرد اکثریتی علاقے میں ایک دھماکے کے نتیجے میں سات سکیورٹی اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں، جب کہ ایک زخمی ہوا ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ دیسی ساخت کے ریموٹ کنٹرول بم سے فوجی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔ترکی کی مسلح افواج کے مطابق جس وقت فوجی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا اس وقت فوجی دیار بکر اور لیجہ کی شاہراہ پر بارودی سرنگوں کو ناکارہ بنانے کا کام کر رہے تھے۔
یاد رہے کہ یہ دھماکہ انقرہ میں کار بم حملے کے 24 گھنٹوں کے اندر ہوا ہے، جس میں ایک فوجی قافلے کے قریب کار بم دھماکے میں کم از کم 28 افراد ہلاک جبکہ 61 افراد زخمی ہوئے تھے۔
انقرہ میں گورنر ہاو¿س کے مطابق بارودی خیز مواد سے بھری ایک گاڑی میں اس وقت دھماکہ ہوا جب ایک فوجی قافلہ اس کے قریب سے گزرا۔دھماکے کے کئی گھنٹوں بعد صدر رجب طیب اردوغان نے ایک بیان میں کہا کہ ’ملک میں اور سرحد پار اس قسم کے حملوں کی وجہ سے ہمارا عزم مزید مضبوط ہو رہا ہے۔‘
طیب اردغان نے کہا: ’ترکی کسی بھی وقت، کسی بھی جگہ یا کسی بھی موقعے پر اپنے دفاع کے حق کے استعمال سے گریز نہیں کرے گا۔‘


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اسی بارے میں: ۔  افغانستان الزام تراشیوں کی بجائے اپنے اندر جھانکے: آئی ایس پی آر