پی ایس ایل فائنل کا امپائر کون ہو؟


’’ایک امپائر پشاور کی مرضی کا ہوگا، ایک کوئٹہ کی پسند کا۔‘‘

نجم سیٹھی نے پی ایس ایل کے فائنل سے پہلے کہا۔

دونوں ٹیموں نے اطمینان کا اظہار کیا۔

پشاور زلمی کے کامران اکمل نے کراچی کے خلاف سنچری بنائی تھی۔

شاہد آفریدی نے انھیں امپائر چننے کی ذمہ داری دی۔

’’علیم ڈار۔‘‘

کامران اکمل نے سوچ کر نام پیش کیا۔

نجم سیٹھی مان گئے۔

اب کوئٹہ گلیڈی ایٹر کی باری تھی۔

کپتان سرفراز احمد نے کہا،

’’لاہور کے اس ٹریفک وارڈن کو امپائر مقرر کیا جائے

جو تیز رفتاری پر بار بار کامران اکمل کا چالان کر دیتا ہے۔‘‘


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

مبشر علی زیدی

مبشر علی زیدی جدید اردو نثر میں مختصر نویسی کے امام ہیں ۔ کتاب دوستی اور دوست نوازی کے لئے جانے جاتے ہیں۔ تحریر میں سلاست اور لہجے میں شائستگی۔۔۔ مبشر علی زیدی نے نعرے کے عہد میں صحافت کی آبرو بڑھانے کا بیڑا اٹھایا ہے۔

mubashar-zaidi has 74 posts and counting.See all posts by mubashar-zaidi