پاک افغان سرحد 18 روز بعد کھول دی گئی


افغانستان میں موجود دہشتگردوں کی پے در پے کارروائیوں کے بعد بند کی گئی سرحد کے باعث دونوں اطراف ہزاروں افراد پھنس گئے تھے جن کی واپسی کے لیے پاکستان نے 2 روز کے لیے طورخم، انگور اڈا اور چمن سے اپنی سرحد کو کھول دیا ہے۔ پاک افغان سرحد پر 3 مقامات سے آمدورفت کھلنے سے دونوں اطراف پر لوگوں کا رش لگ گیا ہے۔

منگل اور بدھ کو صبح 8 سے شام 5 بجے تک تینوں مقامات پر عوام کی پیدل آمدو رفت جاری رہے گی اور دونوں ممالک کے شہری ویزا اور پاسپورٹ متعلقہ حکام کو دکھا کر سرحد پار آ اور جا سکیں گے تاہم تجارتی سرگرمیاں بدستور بند رہیں گی۔

واضح رہے کہ عام طور پر ہر روز طورخم اور چمن سے ہزاروں پیدل افراد کی آمد ورفت کے علاوہ دو ہزار بڑی گاڑیاں تجارتی سامان پاکستان لاتی اور افغانستان لے جاتی ہیں، جن میں اشیائے خور و نوش کے لیے علاوہ نیٹو کا سامان بھی شامل ہے لیکن سرحدی کشیدگی اور سانحہ سیہون شریف کے بعد پاکستان نے 17 فروری کو افغان سے متصل اپنی سرحد کو بند کردیا تھا۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اسی بارے میں: ۔  اگلے پندرہ دنوں میں نواز شریف نااہل ہوجائیں گے،بہت جلد پانچ سے چھ لوگ سلطانی گواہ بن جائیں گے: شیخ رشید