ایک اور بھارتی سپاہی نے اپنی ہی فوج کا بھانڈا پھوڑ دیا


’ویٹرن جوان‘ نامی فیس بک پیج پر پوسٹ کی جانے والی اس ویڈیو میں جوگی داس کا کہنا ہے کہ سب سے زیادہ دفاعی بجٹ رکھنے والی بھارتی فوج کی شان صرف دکھاوا ہے۔ کچھ افسران نے جوانوں کو غلام بنارکھا ہے، جوانوں کوسب سے گھٹیا کھانا دیا جاتا ہے اور کھانا بھی دیا جاتا ہے تو زندہ رہنے کےلئے، ضرورت کےلیے نہیں۔ فوج میں بہت کچھ غلط ہورہا ہے،  ہمیں فوج کے اندر آپس میں لڑنا پڑتا ہے، کب تک برداشت کرتے رہیں گے۔ جو منہ کھولتا ہے، مارا جاتا ہے۔

ویڈیو میں جوگی داس کا کہنا تھا کہ اس نے بھارتی وزیراعظم اور وزیرِ دفاع کو سپاہیوں کے ساتھ ہونے والی بدسلوکی سے متعلق ایک سال تک خط لکھے لیکن اس کی شنوائی نہیں ہوئی بلکہ فوجی ڈسپلن کی خلاف ورزی پر اسے سہائک کی شرم ناک ڈیوٹی پر لگادیا گیا جبکہ اس پورے عرصے میں اسے مسلسل ہراساں بھی کیا جاتا رہا۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے بھی کئی سپاہیوں نے اپنے افسران کے رویے اور انہیں ملنے والی خوراک پر شدید تحفظات کا اظہار کیا تھا، اس کے نتیجے میں فوج کے اعلیٰ ترین حکام نے تو کوئی کارروائی نہیں کی تاہم اس معاملے سے پردہ اٹھانے والا ایک اہلکار کو ضرور قتل کردیا گیا۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔