مشال قتل کی ابتدائی تحقیق میں توہین مذہب کا عنصر نہیں ملا: پولیس


 

ولی خان یونیورسٹی مردان کے مقتول طالب علم مشعال خان کے ہاسٹل کےکمرے سے تمام شواہد پولیس نے تحویل میں لے لئے ہیں۔ ڈی آئی جی مردان محمد عالم شنواری کا کہنا ہے کہ ابتدائی تحقیقات میں توہین مذہب کا کوئی عنصر سامنے نہیں آیا ۔

پولیس کے مطابق طالب علم کے زیر استعمال تمام چیزوں اور میٹریل سے توہین مذہب کا کوئی امکان نظر نہیں آتا ہے۔

پولیس کے مطابق تشدد کے الزام میں نامزد 8ملزمان سمیت 100 کے قریب طلبہ گرفتار کئے گئے ہیں۔ قتل کی مزید تحقیقات جاری ہیں۔

 

 

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں