بینظیرایئرپورٹ پر خواتین پر تشدد، وزیر داخلہ نے شفٹ انچارج کو معطل کر دیا


وزیر داخلہ چوہدری نثار نے ایئرپورٹ پر خواتین مسافروں پر تشدد کا نوٹس لیتے ہوئے معاملے کی انکوائری میں تاخیر پر ایف آئی اے اہلکاروں کی سرزنش کی اور ایئرپورٹ پر تعینات ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے سے جواب طلب کرتے ہوئے وقوعہ پر موجود شفٹ انچارج کو معطل کردیا۔ شفٹ انچارج کی معطلی کا فیصلہ وزارت داخلہ کو موصول شواہد کی روشنی میں کیا گیا جب کہ وزیر داخلہ نے جلد از جلد انکوائری رپورٹ طلب کر لی ہے۔

دوسری جانب بے نظیر بھٹو انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر ناروے جانے والی 2 خواتین مسافروں پر تشدد کی ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد ڈائریکٹر ایف آئی اے اسلام آباد زون نے تشدد کے الزام میں خاتون کانسٹیبل غزالہ شاہین کو کو معطل کر دیا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل اسلام آباد ایئر پورٹ پر ناروے جانے والی 2 خواتین مسافروں کی انٹرنیشل لاؤئج کے امیگریشن کاؤنٹر پر تعینات خاتون اہلکار غزالہ شاہین کی کسی بات پر تلخ کلامی ہوئی جس پر خاتون اہلکار نے دونوں خواتین کو تشدد کا نشانہ بنایا اور پھر بعد ازاں ان کے پاسپورٹ ضبط کر کے زبردستی صلح نامے پر دستخط کر وا کے خواتین کو جانے کی اجازت دی گئی۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اسی بارے میں: ۔  سرگودھا میں روحانی درگاہ پر انیس (19) افراد کا وحشیانہ قتل