پاناما کیس؛ چیف جسٹس کی زیرصدارت جے آئی ٹی کی تشکیل کیلیے اجلاس آج ہوگا


ذرائع كے مطابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار كی سربراہی میں اجلاس آج ہوگا جس میں پاناما لیكس كیس كا فیصلہ دینے والے جج صاحبان شركت كریں گے۔ ذرائع كا كہنا ہے كہ پہلے عدالتی بینچ تشكیل دیا جائے گا جو تمام متعلقہ 6 اداروں كی طرف سے بھجوائے گئے ناموں كا جائزہ لے كرجے آئی ٹی تشكیل دے گا جب کہ جے آئی ٹی كی تشكیل بھی آج یا كل ہونے کا امکان ہے۔

ذرائع كے مطابق اكثریتی فیصلہ تحریر كرنے والے فاضل جج جسٹس اعجاز افضل خان كے بیرون ملك ہونے كی وجہ سے جے آئی ٹی كی تشكیل میں تاخیر ہوئی ہے تاہم اب فاضل جج وطن واپس پہنچ چكے ہیں اس لیے آج اہم اجلاس بلایا گیا ہے۔
ذرائع كے مطابق جے آئی ٹی کے لیے آئی ایس آئی اور ایم آئی نے بریگیڈیئر سطح كے 6 افسران كے نام سپریم كورٹ كو بھجوائے ہیں جب كہ ایف آئی اے نے 3 ایڈیشنل ڈائریكٹر جنرل واجد ضیاء، كیپٹن ریٹائر احمد لطیف اور ڈاكٹر شفیق الرحمان كے نام جے آئی ٹی كے لیے تجویز كیے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ سیكیورٹی اینڈ ایكسچینج كمیشن، اسٹیٹ بینك اور نیب نے بھی عدالت كے فیصلے كے مطابق نام ارسال كردیئے تھے۔

واضح رہے کہ سپریم كورٹ نے 20 اپریل كو پاناما كیس كا فیصلہ صادر كرتے ہوئے وزیراعظم كے خلاف منی لانڈرنگ كے الزامات كی تفتیش كے لیے 6 ركنی جے آئی ٹی تشكیل دینے كا حكم دیا تھا جس کے بعد 26 اپریل كوجے آئی ٹی كے لیے آئی ایس آئی اور ایم آئی سمیت تمام 6 متعلقہ اداروں نے نام سپریم كورٹ كو بھیج دیئے تھے۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔