عمران خان کی تین آف شور کمپنیوں کے شواہد سپریم کورٹ میں جمع کرا دیئے، حنیف عباسی


عمران خان اور جہانگیر ترین نا اہلی کیس کی سماعت چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔ حنیف عباسی کے وکیل اکرم شیخ کا اس موقع حنیف عباسی کے وکیل اکرم شیخ کا کہنا تھا کہ میڈیا پر گفتگو سے منع کرنے کے باوجود نعیم الحق نے احاطہ عدالت میں بات چیت کی جو توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ کسی کے اختیارات میں تخصیص نہیں چاہتے لیکن منع کرنے کے باوجود احاطہ عدالت میں گفتگو بڑی بدقسمتی ہے، باہر جاکر جو مرضی کریں لیکن عدالتی احاطے میں ایسا نہ کریں، میڈیا نمائندوں کو کیس رپورٹ کرنے کی مکمل اجازت ہے۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ کیس کارروائی میں بات کرنے کے لئے سب سے بہترین شخص وکلاء ہیں جب کہ تحریک انصاف کے وکیل انور منصور کا کہنا تھا کہ اپنے پورے کیرئیر میں زیر التوا کیسز پر کبھی بات نہیں کی، جس پر جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ فریقین کو اپنی رائے کا اظہار کرنے کے لئے عدالتی کارروائی کا سہارا نہیں لینا چاہیئے۔

اکرم شیخ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ جھوٹ بولنے پر عمران  خان کی نا اہلی چاہتے ہیں جب کہ حنیف عباسی کا کہنا تھا کہ عمران خان  کی مزید 3 آف شورکمپنیاں ہیں جن کے شواہد سپریم کورٹ میں جمع کرا دیئے ہیں۔ عدالت نے کیس کی سماعت پیر تک ملتوی کردی۔

 

image_pdfimage_print

Comments - User is solely responsible for his/her words

اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں