چیئرمین پیمرا ابصار عالم کو دھمکی آمیز کال میں کیا کہا گیا؟


چیئرمین پیمرا ابصار عالم کو موصول نامعلوم کال کا ٹرانسکرپٹ ذیل میں پیش کیا جا رہا ہے

ہیلو، ہیلو، ہیڈ بات کررہے،

جی پیمرا انچارج بات کررہے ہیں،

جی جی میں سے بات کررہا ہوں انچارج ہوتے ہیں۔ ایک تو آپ سے میں نے یہ ۔جی جی انچارج جو بھی ہے ایک تو میں نے آپ سے یہ کہنا تھا کہ کل آپ نےاچھا نہیں کیا چینل بند کرا کے،آپ کو میں نے بتایا تھا کہ چینل بند نہیں کرانا،

اچھا، ٹھیک ہے اس کے ہائیکورٹ سے آرڈرز آگئے ہیں وہ جس سپیڈ سے آپ نے بند کرایا تھا یہ اس سے زیادہ سپیڈ سے آپ نے کھلوانا ہے، ٹھیک ہے سمجھ آگئی ہے

اگلے پانچ منٹ پر کیبل آپریٹرز کو میں کال کرکے کنفرم کروں گا کہ آپ کی کال انہیں آئی ہے کھولنے کےلئے یا نہیں، ٹھیک ہے۔ نوکری آپ کی سرکاری ہے، ٹھیک ہے آپ کسی کے ذاتی غلام نہیں یہ جو پولیٹیکلBasis  یہ کل بھی بتایا تھا یہ جو پولیٹیکل Basis  پہ چینلز بند ہورہے ہیں نا ں یہ بھگتنا آپ کو پڑے گا، یہ نواز شریف نےکل چلے جانا ہے۔ اس کو اٹھا کے پھینکنا ہے باہر لیکن تم لوگوں کےلئے کوئی جگہ نہیں ہوگی پھر۔

میں نے کل بھی آپ سے عرض کی تھی ہمیں تو جوآرڈر ملا تھا ہم نے صرف Convey  کیا ہے ،

آرڈر کو چھوڑیں آپ زیادہ۔ شاہ سے شاہ کے وفادار بننے کی کوشش نہ کریں۔ میری بات تو سنیں ابھی آپ چینل آپریٹرز کو کال کریں ،ٹھیک ہے پانچ منٹ میں اگلی کالیں شروع ہوجانی چاہئیں اور سب سے پہلے کال گلوبل والے کو کریںJupiter والے کو۔۔۔

چلیں میں کرتا ہوں ۔

ٹھیک ہے ابھی میں کنفرم کروں گا آپ کی کال اگر نہیں آتی تو پھر آپ نے براہِ مہربانی گلہ نہیں کرنا کہ میری ٹانگیں ٹوٹ گئیں، میرا منہ پھٹ گیا کہیں سے۔ ٹھیک ہے جناب، اور آج کل ویسے بھی سٹریٹ کرائم بہت زیادہ ہے کوئی گاڑی ٹکر شکر مار گئی تو اس کا میں ذمہ دار نہیں ہوں گا ، ٹھیک ہے جناب۔ سمجھ آگئی آپ کو بات ، ٹھیک، تھینک یو۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔