کرکٹ میچ ڈھاکہ میں شکست کی اسلامی وجوہات


usman ghaziمحمود غزنوی نے جب سومنات کا مندر توڑا تھا تو جلدی میں اسلام پھیلائے بغیر صرف مندر کا سونا لے کر غزنی چلے گئے تھے تنگ نظر، جاہل، گمراہ اور ذہنی غلام کیا جانیں کہ پاکستان آج غزنوی کی غلطی کا ازالہ کرنے کے لئے جان بوجھ کر بھارت سے ہارا ہے۔ پاکستان کی قومی ٹیم نے اسلام اور پاکستان کے لئے آج جو قربانی دی ہے، اس نے محمد بن قاسم کی یاد تازہ کر دی ہے۔ ہزاروں سال دنیا پر حکومت کرنے والے بڑی سے بڑی قربانی سے دریغ نہیں کرسکتے۔ بھارت سے مقابلے کا ایک اہم پہلو یہ بھی ہے کہ ہم محض دنیا کی نظر میں سامنے ہارے ہیں، درحقیقت ہم نے ہندو بنئے سے شکست تسلیم نہیں کی ہے۔

ارض عالم کے سب سے بڑے لیڈر مرشدی جناب عمران خان نے تین دن پہلے ہی پاکستان کی قربانی نما شکست کی پیش گوئی کردی تھی۔ پشاور یونی ورسٹی کے طلبہ کو شکست کی صورت میں کرنے والے کاموں کی ٹپس دے کر گویا مرشدی نے پاکستانی ٹیم کو پہلے ہی آگاہ کردیا تھا کہ اب انہیں کیا کرنا ہے۔ دنیا کے اکلوتے اچھے انسان جناب عمران خان نے فرمایا تھا کہ کوئی کچھ بھی کہے، اپنی شکست کبھی تسلیم نہ کرو، کوئی ہرا دے تو ماننے سے انکار کردو، شکست کے بعد اخبار پڑھو نہ رشتے داروں سے ملو، بیوی کو ساتھ لو اور پہاڑوں پر چڑھ جاؤ۔ پاکستانی ٹیم کو خیال رہے کہ مسلم دنیا کے واحد عظیم لیڈر کی بات پر عمل کرتے ہوئے کہیں وہ بلوچستان کے پہاڑوں پر نہ چڑھ جائیں خیر، نونہالانِ پاکستان بالکل دل چھوٹا نہ کریں بلکہ اپنے وژن کو بڑا کریں، ورلڈکپ آنے والا ہے، بھارت کو ورلڈکپ میں شکست دینے کے خواب دیکھیں اور ہاں! خوابوں سے مت نکلئے گا، آپ ہار جائیں گے۔


Comments

FB Login Required - comments