فوجداری قانون میں ترمیم کا بل سینٹ سے منظور


senateسینٹ کی انسانی حقوق کی فنکشنل کمیٹی نے بچوں سے متعلق فوجداری قانون میں ترمیم کا بل منظور کرلیا۔ جنسی زیادتی کرنے والے کو اب عمر قید کی سزا ہوگی۔ بچوں کی نازیبا تصاویر یا فلم بنانے پر بھی 7 سال تک قید ہوگی۔ بچوں کے حقوق کا تحفظ ، فوجداری قانون میں ترمیم منظور ، جنسی زیادتی کرنے والے کوعمر قید تک کی سزا ، بچوں کی نازیبا تصاویر یا فلم بنانے والا 7 سال تک جیل کی سلاخوں کے پیچھے جائے گا۔ ترمیمی بل کی منظوری کے بعد اب بچوں کی انسانی سمگلنگ پر بھی 5 سے 7 سال تک قید کی سزا دی جائےگی۔ بچوں کو سزا دینے کی عمر کی حد بھی 7 سے بڑھا کر 10سال کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ قصور واقعہ سے متعلق انسانی حقوق کمیشن کی رپورٹ کے مطابق قصور میں مجموعی طور پر زیادتی کے 32 واقعات رپورٹ ہوئے ، حقیقت پر مبنی 20 واقعات پر مقدمات درج کیے گئے۔ بچوں کی ویڈیو بنانے والے شخص کا انتظامیہ میں اثر و رسوخ ہونے کے باعث کوئی قانونی کارروائی نہیں ہوئی۔


Comments

FB Login Required - comments