مدیر ’ہم سب‘ کی گزارشات


کچھ عزیز دوستوں کو حالیہ دنوں میں ’ہم سب ‘ ویب سائٹ کے مواد ،موضوعات اور پیشکش پر تحفظات پیدا ہوئے ہیں۔ ان نکات پر غور و فکر کیا گیا ۔ انہیں درست تسلیم کیا گیا اور طے کیا گیا کہ تصویری مواد کم کر دیا جائے ۔ تصاویر میں زیادہ سنجیدگی ہو ۔ مواد میں سنسنی خیزی پر کڑی نظر رکھی جائے۔ عنوانات مناسب باندھے جائیں۔

دوستوںکا شکریہ ادا کرنا چاہیے کہ انہوں نے ٹھیک وقت پر صحیح بات کہی ۔ یہ بھی درست ہے کہ کچھ مہربانوں کو جنوری 2016 ءسے اعتراضات چلے آتے ہیں۔ ان کی تسکین کرنا فانی انسانوں کے لیے مشکل ہے ۔ باری تعالیٰ نے ایسے افراد کو انتظار کرنے کے لئے کہہ رکھا ہے۔ تاہم ہمدرد پڑھنے والوں اور نئے پڑھنے والوں کا خاص خیال رکھنا چاہیے۔ یہ اعتراضات صحیح نقطہ نظر پیش کرتے ہیں۔ اسے تسلیم کر لیا گیا ہے۔

اس نکتے پر بھی غور و فکر کیا گیا کہ ہمارے لکھنے والے رضاکارانہ طور پر شفقت فرماتے ہیں ۔ فرمائش تو کی جا سکتی ہے، تقاضا نہیں کیا جا سکتا۔ یہ امر طے ہے کہ لکھنے کے عمل پر داخلی تحریک ، ذہنی کیفیت ، نجی حالات اور پیشہ ورانہ ذمہ داریاں اثر انداز ہوتی ہیں۔ ان امور کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ نتیجہ بھی نکالا گیا ہے کہ ویب سائٹ پر میعاری تحریروں کی ضرورت ہوتی ہے۔ بڑی مقدار میں کچرے سے ویب سائٹ کا حلیہ تبدیل کرنا صرف چند گھنٹے کا کام ہے۔ اس سے ویب سائٹ کی وقعت ختم ہو جائے گی۔ ہمیں معیاری تحریریں چاہئیں۔ ضروری موضوعات پر مناسب وقت پر رائے دینے کی ضرورت ہوتی ہے۔ یہ بھی ممکن ہوتا ہے کہ ویب سائٹ پر کام کرنے والے کسی ذاتی ضرورت کے تحت غیرحاضر ہیں۔ ایسی کوتاہی پر بار بار معذرت کی جاتی ہے۔ سمجھنا چاہیے کہ ایسی کوتاہی بھی انسانی تحدیدات کا حصہ ہے۔ ہمارے معزز لکھنے والے اپنے پڑھنے والوں کا ایک خاص حلقہ رکھتے ہیں ۔ ان کے قاری ویب سائٹ پر ان کی تحریر پڑھنے اور ان کا نقطہ نظر جاننے کے لیے تشریف لاتے ہیں۔ جب ان کی تحریریں نظر نہیں آتیں تو قاری مایوس ہوتا ہے۔

’ہم سب ‘ کی پالیسی متعدد دفعہ بیان کی جا چکی ہے۔ نقطہ نظر کے اختلاف پر کوئی تحریر روکی نہیں جاتی۔ معمولی پیشہ ورانہ امور پیش نظر رکھے جاتے ہیں۔ عین ممکن ہے کہ ایک تحریر آپ کی نظر میں اعلیٰ ہو، مدیر کے معیار پر پوری نہیں اتری۔ جس تحریر کو آپ معمولی سمجھتے ہیں مدیر اور پڑھنے والوں کی نظر میں اس تحریر کا مقام ثریا کے قریب ہو سکتا ہے۔یہ عین ممکن ہے کہ ایک تحریر آپ کے نفیس ذوق پر گراں گزری، اسی موضوع پر بہت سے لوگ پڑھنا چاہتے ہیں۔ ایک موضوع پر آپ کو سخت بے چینی ہے ، ممکن ہے کہ دوسرے لوگ اس معاملے سے قطعی بے خبر ہوں۔ ان معاملات میں انسانی اختلافات کو جگہ دی جاتی ہے۔ کچھ لوگ ہمیشہ درست ہوتے ہیں۔ ایسے لوگ کبھی غلطی نہیں کرتے۔ ایسے افراد ہر بات پوری طرح جانتے ہیں۔ ہر معاملہ پہلے سے جانتے ہیں، دوسروں کی نیت بھی خوب پہچانتے ہیں۔ ایسے افراد پر رحم کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ ان سے الجھنا نہیں چاہیے۔

ہمارے کچھ لکھنے والے اپنے طور پر یہ فرض کئے بیٹھے ہیں کہ ان پر ایک شاہکار تحریر اترے گی تو اسے قلم بند کیا جائے گا۔ اگر لکھنے والے کا یہ استحقاق تسلیم کر لیا جائے تو عالمی سطح پر اچھے سمجھے جانے والے مصنفوں کی کوئی تحریر یا کتاب کبھی ناکام نہ ہو۔ کتابیں لکھی جاتی ہیں۔ کتابیں مقبول ہوتی ہیں۔ کتابیں مسترد کی جاتی ہیں۔ لکھنے والے کا کام لکھنا ہے۔ مختلف تکنیک اور موضوعات پر خامہ فرسائی کرنا ہے۔ ٹھیک ٹھیک پیش گوئی کرنا قریب قریب ناممکن ہے کہ کب کسی کے قلم سے ایک اچھی مزاحیہ تحریر نکلے گی ۔ کب ان کی مزاحیہ تحریر آواز نکالے بغیر وفات پا جائے گی۔ کب ان کے طنز کو مستند اساتذہ تحسین کے قابل قرار دیں گے ۔ کب ان کا طنز رنجک چاٹ جائے گا۔ ایک ہی موضوع ہو گا۔ کسی لکھنے والے کے دماغ میں انوکھے ، پرزور اور مو¿ثر دلائل پیدا ہوں گے۔ اسی موضوع پر ایک بے کار تحریر بھی لکھی جا سکتی ہے۔ لکھنا اندھیرے میں محبت کرنے جیسا ہے۔ کبھی بات بن جاتی ہے ، کبھی بات بکھر جاتی ہے۔ محبت کرتے رہنا چاہیے ۔ لکھتے رہنا چاہیے۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔