بھارت پاکستان کا میچ دھرم شالا سے منتقل کرنے پر رضامند


matchپاکستان اور ہندوستان کے درمیان ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں 19 مارچ کو ہونے والا میچ اب دھرم شالہ میں نہیں ہو گا۔ہندوستانی کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) پاکستان کی حکومت کی جانب سے کرکٹ ٹیم بھیجنے کی منظوری کا انتظار کر رہا ہے۔
ایک نجی ٹی وی چینل کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے حکام نے تصدیق کی ہے کہ میچ کا مقام تبدیل کیا جا رہا ہے البتہ انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ اب میچ کہاں ہوگا۔
واضح رہے کہ معاملہ اس وقت سامنے آیا ہے جب ریاست ہماچل پردیش کے وزیر اعلیٰ کی جانب سے سکیورٹی کی عدم فراپمی کے بیان پر پاکستان نے سکیورٹی خدشات کا اظہار کرتے ہوئے ٹیم ہندوستان بھیجنے سے روکنے کا فیصلہ کیا اور پہلے سیکیورٹی کا جائزہ لینے کے لیے ماہرین کی ٹیم دھرم شالہ بھیجی۔
امریکی خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق پی سی بی حکام کا کہنا تھا کہ آئی سی سی کو کہا گیا ہے کہ کولکتہ یا موہالی کو متبادل مقام کے طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔پاکستانی حکام کی جانب سے نام ظاہر کرنے کی شرط پر تفصیلات بتائی گئیں کیوں کہ وہ میڈیا سے بات کرنے کے مجاز نہیں تھے۔پاکستان کی ٹیم کو 9 مارچ کو ہندوستان روانہ ہونا تھا جہاں وہ اپنا پہلا میچ 16 مارچ کو کولکتہ میں کھیلے گی۔
پی سی بی ڈائریکٹر میڈیا کے مطابق ہندوستان میں سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لینے والے پاکستانی وفد نے دھرم شالہ میں پاکستان ٹیم کی سیکیورٹی کے حوالے سے منفی رپورٹ وزرات داخلہ کو بھجوائی ہے۔
سکیورٹی وفد کی رپورٹ کے مطابق موجودہ صورت حال میں پاکستان ٹیم کا میچ کھیلنے کے لیے دھرم شالہ جانا خطرناک بھی ہوسکتا ہے، دھرم شالہ پولیس اور انتظامیہ نے سیکورٹی کی یقین دہانی تو کرائی ہے لیکن کسی گڑ بڑ کی صورت میں انتظامیہ کے پاس فوری سدباب کے لیے زیادہ سہولیات نہیں۔چیئرمین پی سی بی نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ پاکستان ٹیم کو ہندوستان بھیجنے کا فیصلہ سکیورٹی وفد کی رپورٹ کے مطابق کریں گے۔


Comments

FB Login Required - comments