سعودی عرب کی نصابی کتاب میں شاہ فیصل سٹار ٹریک کے کردار یوڈا کے ساتھ


سعودی عرب کے وزیر تعلیم نے سکول کی نصاب کی کتابوں پر معافی مانگی ہے جن میں ایک تصویر چھپی ہوئی ہے جس میں سٹار وارز کا ایک کردار یوڈا شاہ فیصل کے ساتھ بیٹھا ہوا ہے۔ احمد العیسیٰ نے کہا ہے کہ کمیٹی اس نادانستہ غلطی کی تحقیقات کر رہی ہے۔

اس تصویر میں یوڈا کو شاہ فیصل کے ساتھ بیٹھا دیکھا جا سکتا ہے۔ شاہ فیصل اس تصویر میں سنہ 1945 میں اقوام متحدہ کے چارٹر پر دستخط کر رہے ہیں۔یہ تصویر سعودی آرٹسٹ شویش نے بنائی تھی۔

شویش نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کو نہیں معلوم کہ یہ تصویر سکول کی نصابی کتاب میں کیسے چھپ گئی۔تاہم انھوں نے کہا کہ وہ شاہ فیصل کی عزت کرتے ہیں جنھوں نے سعودی عرب کو بدل کر رکھ دیا اور عالمی سطح پر ایک اہم ملک بنایا۔’ہر کوئی شاہ فیصل سے محبت کرتا ہے بشمول نئی نسل کے۔’

یہ تصویر سنہ 2013 کے آرٹ ورک میں سے ایک ہے جس کو ‘اقوام متحدہ (یوڈا)’ کا نام دیا گیا ہے۔ اس آرٹ ورک میں اقوام متحدہ کی تاریخی تصاویر پر امریکی پوپ کلچر جیسے کہ کیپٹن امریکہ سے لے کر ڈارتھ فیڈر تک کی تصاویر لگائی گئی ہیں۔

شویش کا کہنا ہے کہ ان کو اس تصویر میں یوڈا کو شامل کرنے کا خیال اس وقت آیا جب انھوں نے مصر کے سابق صدر انور سادات کی تصویر دیکھی جس میں وہ ڈزنی لینڈ میں مکی ماؤس کے ہمراہ کھڑے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ یوڈا کو شاہ فیصل کے ساتھ اس لیے بٹھایا کہ دونوں ہی ‘دانشمند، مضبوط اور پرسکون’ رہنے والے ہیں۔ شویش نے کہا کہ کچھ تبصروں میں ان پر بھی یہ تصویر بنانے پر تنقید کی جا رہی ہے لیکن زیادہ تر تنقید وزارت تعلیم پر ہے۔

اسی بارے میں: ۔  پاکستان سے پیار کا ہدایت نامہ

Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 876 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp