انقرہ میں بم دھماکے کے نتیجے میں 34 افراد جاں بحق


\"turky\"ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں زور دار دھماکے کے نتیجے میں 34 افراد جاں بحق اور ایک سو پچیس زخمی ہو گئے۔ دھماکے سے کئی بسوں اور گاڑیوں میں آگ لگ گئی۔
ترکی کے دارالحکومت انقرہ کے علاقے کیزیلے میں کار بم دھماکا مقامی وقت کے مطابق شام چھ بجکر چالیس منٹ پر ہوا۔ دھماکا شہر میں سرکاری عمارتوں کے قریب بارودی مواد سے بھری گاڑی کے ذریعے کیا گیا۔ مزید دھماکوں کے خطرے کے پیش نظر علاقے کو خالی کروا لیا گیا۔ ترک وزیر داخلہ افکان اعلیٰ کا کہنا ہے زخمیوں کو انقرہ کے مختلف ہسپتالوں میں داخل کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا 19 زخمیوں کی حالت تشویش ناک ہے۔ ترک صدر طیب اردگان نے ایک بیان میں کہا ہے حکومت اپنے شہریوں اور ملک کی حفاظت سے پیچھے نہیں ہٹے گی۔ ایسے حملے دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے عزم کو کمزور نہیں کر سکتے۔ انقرہ کی ایک عدالت نے دھماکے کی تصاویر شیئر کرنے پر فیس بک اور ٹویٹر پر پابندی لگا دی ہے۔ کسی گروہ نے دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔ وزیراعظم نواز شریف، وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور گورنر خیبرپختونخوا اقبال ظفر جھگڑا نے انقرہ دھماکوں کی شدید مذمت کی اور قیمتی جانوں کی ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا۔


Comments

'ہم سب' کا کمنٹس سے متفق ہونا ضرور نہیں ہے۔ کمنٹ کرنے والا فرد اپنے الفاظ کا مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور اس کے کمنٹس کا 'ہم سب' کی انتظامیہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔