شاہد آفریدی نے کیا کہا؟


 asif Mehmoodشاہد آفریدی کے بیان کو سمجھنے کا ایک رخ یہ بھی ہے۔ ۔ ۔

1۔ پاکستانی ٹیم کے خلاف بھارت میں دو گروہ احتجاج کی دھمکی دے رہے ہیں۔ ایک ہندو شاونزم کے علمبردار انتہا پسند جنہوں نے پچ اکھاڑنے کی دھمکی دی اور دوسرے وہ سابق فوجی جنہوں نے میچ والے دن سٹیڈیم کے باہر مظاہرے کا اعلان کیا تھا۔ آفریدی کا بیان ان دونوں گروہوں کو ایک ہلکی سی چپت تھی کہ تم نفرت کے سوداگر اورجنونی ہو ورنہ بھارت میں عام آدمی سے تو ہمیں ہمیشہ پیار ہی ملا۔ یہ انتہا پسند اقلیت کو ممکن حد تک تنہا کر کے اپنی ٹیم کے لیے ایک سازگار ماحول تلاش کرنے کی کوشش تھی۔ اس بیان کا ایک ہدف بھارتی میڈیا بھی ہو سکتا ہے تاکہ ورلڈ کپ کے دوران اس کو بھی ممکن حد تک معقولیت کی طرف لایا جائے جو بالعموم جنون اور نفرت کی نفسیات کا اسیر رہتا ہے۔ یہ بیان کراﺅڈ کو کسی حد تک فرینڈلی کرنے یا یا بہت زیادہ ہوسٹائل نہ ہونے دینے کی ایک کوشش بھی ہو سکتا ہے۔ ہمیں یاد ہونا چاہیے کہ ورلڈ کپ 1992 میں گواسکر نے ہمارے حق میں چار فقرے کہے تھے، ہمارے لوگ ابھی تک گواسکر کو اچھا سمجھتے ہیں…. اب ظاہر ہے ایسا سوچنا ٹیم کے مفاد میں ہے کہ اسے جس حد تک ممکن ہو سازگار ماحول ملے اور وہ دباﺅ سے آزاد ہو کر پرفارم کر سکے۔

2۔ ہمیں ذہن میں رکھنا چاہیے کہ آفریدی نہ توکوئی جہاندیدہ سفارتکار ہیں جو زبان و بیاں پر دسترس رکھتے ہوں نہ ہی عام زندگی میں وہ ایک قادرالکلام شخص ہیں۔ وہ ایک کھلاڑی ہےں۔ زبان و بیان کی نزاکتوں کے حوالوں سے انہیں گنجائش دینی چاہیے۔

afridi3۔ ٹیم اس وقت بھارت میں ہے، اسے تائید کی ضرورت ہے۔ ہمارے ہاں اس وقت تنقید ہو گی تو ٹیم کے مورال پر اثر پڑے گا۔ اور جو ندامت آفریدی کے بیان کے بعد بھارتی انتہا پسند طبقے کو ہونا تھی ،وہ کم ہو جائے گی اور فوکس ہمارے رد عمل پر ہو جائے گا اور ہماری ٹیم بھارت میں ’ لافنگ سٹاک‘ بن جائے گی۔

4۔ آخری بات یہ آفریدی کے کھیل پر تو سوال اٹھ سکتے ہیں ،ان کی حب الوطنی پر نہیں۔ جسے ان کی حب الوطنی پر شک ہو ،اس کے لیے بہترین مشورہ یہی ہے کہ پہلی فرصت میں کسی اچھے معالج سے رجوع کرے۔

اے میری زندہ اور پائندہ قوم …. تیرے دودھ کے دانت کب گریں گے


Comments

FB Login Required - comments

One thought on “شاہد آفریدی نے کیا کہا؟

  • 14-03-2016 at 11:39 pm
    Permalink

    Ek hangamay pe mauqoof he ghar ki Ronan.

Comments are closed.