نہ ہاتھ ہوں گے نہ غیر مردوں کو میسج کرو گی


ماسکو (روس)؛ دی مرر کی رپورٹ کے مطابق 26سالہ دمتری گراکیوف نامی ملزم کو اپنی بیوی مارگریٹا کے کردار پر شبہ ہوا جس پردونوں میں جھگڑا ہو گیا۔ دمتری اگلے روز مارگریٹا کو جنگل میں لے گیا اور وہاں کلہاڑے سے اس کے دونوں ہاتھ کاٹ ڈالے اور پھر خود ہی اسے ہسپتال پہنچایا اور خود کو پولیس کے حوالے کر دیا۔مارگریٹا نے پولیس کو بتایا کہ اس کے کسی سے تعلقات نہیں تھے، دمتری کا شک غلط تھا۔ اس نے میرے ہاتھ کاٹتے ہوئے کہا کہ اب تم کبھی کسی کو میسج نہیں کر سکوں گی۔“

’دونوں کے دوستوں کا کہنا ہے کہ دراصل مارگریٹا اپنے شوہر کو طلاق دینے کی تیاری کر رہی تھی جس کی وجہ سے اس نے مارگریٹا کے ساتھ یہ سلوک کیا اور اس کے ہاتھ کاٹ ڈالے ۔ ایک دوست کا کہنا تھا کہ ”دمتری نے ایک روز قبل مجھے کہا تھا کہ میں مارگریٹا کو طلاق نامے پر دستخط کرنے کے قابل نہیں چھوڑوں گا۔“رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر دو بچوں کی ماں مارگریٹا کا ایک ہاتھ واپس جوڑنے میں کامیاب ہو گئے تاہم دوسرا نہیں جوڑا جا سکا۔ دمتری کے خلاف عدالت میں مقدمہ زیرسماعت ہے۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں